300 ارب کا بڑا پراجیکٹ‘ غریب کاشتکاروں کی قسمت بدلنے کا فیصلہ

  300 ارب کا بڑا پراجیکٹ‘ غریب کاشتکاروں کی قسمت بدلنے کا فیصلہ

  

لودھراں ( نما ئند ہ پا کستا ن)پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر خان ترین نے لودھراں میں نیا پاکستان ہاؤسنگ پراجیکٹ اور مرغی پال سکیم کا افتتاح کردیا۔جہانگیر خان ترین نے اڈا پرمٹ لنک روڈ کا بھی افتتاح کیا۔جہانگیر خان ترین نے مرغی پال سکیم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خوشی ہے لودھراں میں مرغبانی اسکیم کا افتتاح کر رہے ہیں۔سارے پاکستان میں (بقیہ نمبر30صفحہ12پر)

زرعی ایمرجنسی کے تحت مختلف پروگرامز شروع کرینگے۔یہ زراعت ایمرجینسی پروگرام پاکستان کی تاریخ کا 300 ارب کا سب سے بڑا پروگرام ہے جو غریب کاشتکاروں کی قسمت بدلے گا۔پکے کھالوں کا سب سے بڑا پروگرام جس کا افتتاح اگلے مہینے کر رہے ہیں۔ اس سے پہلے کھالے پکے کرنے کا پچاس ارب کا پروگرام میں نے 2005میں بنایا تھا۔اس پروگرام کے تحت ستر ہزاز کھالے سارے پاکستان میں پختہ کیے جائیں گے۔جہانگیر ترین نے کہا کہ بارشوں اور گرمی کی شدت کی وجہ سے فصلیں متاثر ہوئی ہیں۔وزیراعظم او ر وزیر خزانہ سے گزارش کریں گے کہ ممکنہ حد تک کاشتکاروں کے نقصان کا ازالہ کیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ پچھلے دس سال میں جو دو حکومتیں رہی انہوں نے زراعت کو یکسر نظر انداز کیا۔ہم کسانوں کی فلاح وبہبود کے لئے ہرممکن اقدامات کررہے ہیں۔پرمٹ لودھراں روڈ کا اگلے ہفتے تک ٹینڈر لگ جائے گا۔ جہانگیر ترین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم جو گھر سولہ لاکھ کا بنا کر دے رہے ہیں وہ مارکیٹ میں پچیس لاکھ کا گھر ہو گا۔ لودھراں کے بعد دنیا پور اور کہروڑپکا میں بھی ہاوسنگ پراجیکٹ شروع کرنے کی کوشش کرینگے۔انہوں نے کہا کہ لودھراں کو ایک مثالی ضلع بنانے کے لیے اپنا بھرپور کردار ادا کرتا رہوں گا۔لودھراں میں کرپشن کرنے والے افسران کی کوئی جگہ نہیں۔لودھراں کا فیملی ہسپتال جیسے ہی مکمل ہو گا اور سٹاف مکمل ہو گا تو اسے شروع کر دیا جایے گا۔لودھراں کے صحافیوں کو ہیلتھ کارڈ سکیم میں رجسٹرڈ کرینگے۔ جہانگیرترین نے کہا کہ حج پر جانے سے پہلے شاہ محمود بہت زور سے بغل گیر ہوئے تھے جس سے سب معاملات ختم گئے۔شاہ محمود قریشی اور میں مل کر پارٹی کے لیے کام کرتے تھے اور کرتے رہیں گے۔مولانا فضل الرحمان پہلی بار پارلیمنٹ سے باہر ہوئے ہیں۔مولانا فضل الرحمان کوپاکستان کا خیال کرنا چائیے مولانا صرف اپنا خیال کر کے دھرنا دے رہے ہیں۔ن لیگ مولانا کے ساتھ شامل ہونے کے معاملہ پر تقسیم کا شکار ہے۔ایک سوال کے جواب میں جہانگیر ترین نے کہا کہ مجھے کوئی ایشو نہیں جنوبی پنجاب کا سیکرٹریٹ کہیں بھی بنا دیا جائے۔پولیس ریفارمز پر عمران خان کی سربراہی میں کام ہو رہا ہے۔ لودھراں بہاولپور سپیڈو بس کی منظوری ہو گئی ہے بہت جلد چلنا بھی شروع ہو جائے گی۔

جہانگیر ترین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -