حادثات میں بچے سمیت6 افراد جاں بحق‘ 1 لاش برآمد

  حادثات میں بچے سمیت6 افراد جاں بحق‘ 1 لاش برآمد

  

ملتان‘جتوئی‘ ڈیرہ‘ راجن پور‘ رحیمیار خان (وقائع نگار‘ نمائندگان پاکستان) حادثات میں بچے سمیت 6 افراد جاں بحق‘ 1 لاش برآمد ہوئی۔ملتان سے وقائع نگار کے مطابق  رام کلی کے علاقے میں تین سالہ بچہ نہر میں گر کر جاں بحق ہوگیا۔تفصیل کے مطابق بہاولپور بائی پاس کے قریب رام کلی میں تین سالہ زین گھر کے پاس کھیلتے ہوئے نہر میں گر گیا۔(بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

جسکی اطلاع ملنے پر ریسکیو موقع پر پہنچی اور لاش نکال کر پولیس کی مو جودگی میں لواحقین کے حوالے کر دیا گیا ہے۔جتوئی سے نامہ نگار کے مطابق قتل یا خود کشی جتوئی کے نواح میں 41سالہ محمد اسماعیل کی لاش گھر کے قریب آم کے درخت کے ساتھ گلے میں پھندا کے ساتھ لٹکی ہوئی پائی گئی تفصیلات کے مطابق جتوئی کے نواحی علاقے موضع سہو میں 41 سالہ نوجوان محمد اسماعیل قریشی کی لاش اس کے گھر کے نزدیک آم کے درخت کے ساتھ گلے میں پھندا ڈالے لٹکی ہوئی ہوئی ملی اور مقامی لوگ کافی تعداد میں جمع ہوگئے اور پولیس کو  اطلاع ملتے ہی ایس ڈی پی او جتوئی ملازم حسین خان تھانہ جتوئی پولیس ایڈیشنل ایس ایچ او واحد بخش اور حضور بخش اے ایس آئی نفری کے ساتھ موقع پر پہنچ گئے اور مقتول محمد اسماعیل کی لاش کو نیچے اتارا ابتدائی تحقیقات کے مطابق مقتول کے بھائی عاشق حسین اور ساجد حسین نے پولیس کو بتلایا کہ ہماری بھابھی کے ایک شخص سے ناجائز تعلقات ہیں جس کی وجہ سے ان کے گھر ہر وقت لڑائی جھگڑا ہوتا رہتا تھا انہوں نے مزید کہا ہے کہ ہمیں شک ہے کہ مقتول کی بیوی نے اپنے آشنا کے ساتھ ملکر ہمارے بھائی محمد اسماعیل کو پہلے قتل کیا اور پھر بعد میں اس کی لاش کو گھر کے قریب آم کے درخت سے لٹکا کر خود کشی کا ڈرامہ رچانے کی کوشش کی پولیس نے مقتول کے بھائی ساجد حسین کی درخواست پر لاش پوسٹ مارٹم کیلئے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جتوئی لے آئی جبکہ مقتول کی بیوی نے اپنے بیان میں پولیس کو بتلایا گزشتہ رات میرے خاوند محمد اسماعیل کسی بات پر بچوں کو مار پیٹ رہا تھا تو میں نے اس کو ایسا کرنے سے روکا تو اس نے غصہ میں آکر کہا کہ آپس میں خوش رہو میں اس دنیا سے جارہا ہوں یہ کہہ کر گھر سے باہر چلاگیا اور پوری رات گھر واپس نہ آیا جبکہ ہم اس کا انتظار کرتے رہے صبح سویرے لوگوں نے ہمیں آکر بتایا کہ آپ کے خاوند نے پھانسی کھا لی ہے مقتول 4 بیٹے اور 3 بیٹیاں کا باپ تھا ایڈیشنل ایس ایچ او واحد بخش نے صحافیوں کو بتلایا کہ تفتیش میرٹ پر کی جائے گی اس میں اگر کوئی قتل کے اقدامات پائے گئے تو ملزمان کے ساتھ کسی قسم کی کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔ ڈیرہ غازیخان میں نمائندہ خصوصی کے مطابق کوئٹہ روڈ پرٹرک اور موٹرسائیکل کی مابین ھونیوالے تصادم کے نتیجے میں سولہ سالہ نوجوان جانبحق،جانبحق ہونے والے نوجوان کی شناخت محمد عرفان کے نام سے ہوئی حادثہ اوور ٹیکنگ کے دوران ٹرک کی ٹکر کے باعث پیش آیا حادثہ کے نتیجہ میں نوجوان موقع پر ہی جان کی بازی ھارگیا حادثہ کے فوری بعد ٹرک ڈرائیور ٹرک چھوڈکر موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ھوگیا تاھم ریسکیو ٹیم کے موقع پر نہ پہنچنے کے باعث ورثا لاش اپنی مدد آپ کے تحت گھر اٹھاکر لیگئے واقع کی اطلاع پر گھر میں کہرام مچ گیا اور والدین پر غشی کے دورے پڑنے لگے۔راجن پور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق راجن پور کے نواحی علاقے ساہن والا میں مچھلیاں پکڑ نے کیلئے نہر میں چھلا نگ والا نوجوان زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا، ریسکیو ڈبل ون ڈبل ٹو نے نوجوان کی لاش نکال کر ورثاء کے حوالے کردی قصبہ شکار پور کارہائشی محمدارشد نامی نوجوان مچھلیاں پکڑ نے نہر پر گیا جہاں تیز پانی کے بہاؤ سے زندگی کی بازی ہار گیا ریسکیو کی ٹیم نے جاں بحق نوجوان کی لاش نکال کرورثاء کے حوالے کردی ہے۔ رحیمیار خان سے بیورو رپورٹ کے مطابق شوگر مل میں کام کرنے کے دوران 60فٹ اونچائی سے 35سالہ شخص گر کر شدید زخمی‘ ہسپتال میں دم توڑ گیا۔ تفصیل کے مطابق جیٹھہ بھٹہ بستی فقیر بخش کا رہائشی35سالہ محمد صدیق جوکہ گلف شوگر مل میں کام کرتا تھا۔ گذشتہ روز بغیر حفاظتی انتظامات کے 60فٹ اونچائی پر کام کرنے میں مصروف تھا کہ پاوں پھسل جانے کے باعث زمین پر آگرا۔ ساتھی مزدوروں نے طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال رحیم یارخان منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود محمدصدیق جانبر نہ ہوپایا اور دم توڑ گیا۔ٹریفک حادثے میں شدید زخمی ہونے والا 65سالہ شخص ہسپتال میں دم توڑ گیا۔ 32زیرعلاج۔ تفصیل کے مطابق صادق آباد کا رہائشی 65سالہ فلک شیر اپنی موٹرسائیکل پر سوار ہوکر کام کے سلسلہ میں جارہا تھا کہ پیچھے سے آنیوالی تیز رفتار کار نے ٹکر ماردی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہوگیا۔ ورثائنے طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال منتقل کیا جہاں طبی امداد کے باوجود فلک شیر جانبر نہ پایا اور دم توڑ گیا۔ مختلف حادثات میں زخمی ہونیوالے 32افرادجن میں چک عباس کا رہائشی 4سالہ حسن علی‘ حسان پور کا6سالہ محمدثقافت‘ ڈہرکی کا 10سالہ مانجھی رام‘ گلشن اقبال کا دوسالہ محمدعثمان‘ چک 72این پی کی 30سالہ پروین‘ صادق آباد کی 24سالہ سادیہ بی بی‘ گلش اقبال کا 16سالہ محمدحمزہ اور اڈا گلمرگ کا 17سالہ محمدعثمان وغیرہ شامل ہیں جنہیں شیخ زاید ہسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -