پلاسٹک بیگز پر پابندی سے ہجرتی پرندوں کو بھی فائدہ ہوگا، مرتضیٰ وہاب

  پلاسٹک بیگز پر پابندی سے ہجرتی پرندوں کو بھی فائدہ ہوگا، مرتضیٰ وہاب

  

کراچی (این این آئی)حکومت سندھ کے ترجمان اور وزیر اعلی سندھ کے مشیر برائے قانون، ماحولیات،موسمیاتی تبدیلی اور ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے پلاسٹک بیگز پر لگائی گئی حالیہ پابندی کے ہمہ گیر فوائد حاصل ہونگے۔ ہجرتی (مہمان) پرندوں کے عالمی دن 12اکتوبر کے موقع پر صوبائی مشیر ماحولیات نے اپنے بیان میں کہا کہ اپنے دیگر ماحولیاتی نقصانات کے علاوہ جا بجا بکھرے اور ہواؤں میں اڑتے استعمال شدہ پلاسٹک بیگز آبگاہوں اور ان کے اطراف کو بھی آلودہ کرتے ہیں اس کے ساتھ ساتھ آب گاہوں سے پانی پینے والے اور ان کے آس پاس عارضی بسیراکرنے والے ہجرتی (مہمان)پرندوں کی چونچ اور تنفس کی نالی میں پھنس کر ان کے لیے جان لیوا ثابت ہوتے ہیں۔تاہم حکومت سندھ کی جانب سے پلاسٹ بیگز پر لگائی گئی پابندی کے دور رس اثرات ہجرتی (مہمان) پرندوں اور ان کے عارضی مسکنوں کی نگہداشت اور حفاظت کی بہتری کی صورت میں کچھ ہی عرصہ میں نمودار ہونا شروع ہوجائیں گے۔صوبائی مشیر کا کہنا تھا کہ مذکورہ پابندی کے بعد سندھ میں پلاسٹک بیگز کا استعمال آہستہ آہستہ کم سے کم ہوتا جائے گا جس کے نتیجے میں سندھ کی آب گاہیں ان کے مضر اثرات سے پاک ہوتی چلی جائیں گی اور خطے کے انتہائی سرد علاقوں سے عارضی قیام کے لیے سندھ کی آب گاہوں کی جانب آنے والے مہمان پرندوں کی نگہداشت اور حفاظت میں بہتری آئے گی۔واضح رہے کہ ہر سال مئی اور اکتوبر کے دوسرے ہفتے کے دن ہجرتی پرندوں کا عالمی دن منایا جاتا ہے تاکہ لوگوں میں مذکورہ پرندوں اور ان کے مسکنوں کی نگہداشت اور حفاظت کے حوالے سے شعور بیدار کیا جائے۔اس سال یہ دن 11 مئی کو اور اب کل یعنی 12اکتوبر کو منایا گیا.۔اس سال کی تھیم "پرندوں کی حفاظت کے لیے پلاسٹک کی آلودگی کے مسئلے کا حل بنو".رکھی گئی ہے۔ہجرتی پرندے ایسے پرندے ہوتے ہیں جو اپنی مستقل قیام گاہوں کے موسم کی شدت سے بچنے کے لیے آس پاس کے معتدل موسم والے علاقوں میں عارضی پناہ لیتے ہیں اور اپنے اصل علاقے کا موسم قابل برداشت ہونے پر واپس ہولیتے ہیں۔

مرتضیٰ وہاب

مزید :

صفحہ آخر -