کیپٹن(ر)صفدر کی پولیس اہلکاوں سے ہاتھا پائی کے مقدمہ میں ضمانت کنفرم

کیپٹن(ر)صفدر کی پولیس اہلکاوں سے ہاتھا پائی کے مقدمہ میں ضمانت کنفرم

  

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج تجمل شہزادنے سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے دامادکیپٹن (ر)صفدرکی طرف سے تھانہ اسلامپورہ پولیس کے اہلکاروں سے ہاتھا پائی کے کیس میں عبوری ضمانت کنفرم کرتے ہوئے انہیں 50ہزار روپے کے مچلکے جمع کروانے کاحکم دے دیاہے۔کیس کی سماعت شروع ہوئی تو کیپٹن (ر) محمدصفدر کے وکلاء نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ پولیس نے غلط الزام کے تحت ان کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے،مریم نوازکی پیشی کے موقع پراہلکارکارکنوں پرتشددکررہے تھے،جس پر آگے ہوکر انہیں بچایا۔سرکاری وکیل نے کہا کہ کیپٹن(ر) صفدرنے پولیس اہلکاروں پرہاتھ اْٹھایااوران سے ڈنڈے چھین لئے جوکار سرکارمیں مداخلت ہے۔عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعدکیپٹن (ر) محمد صفدر کی عبوری ضمانت کنفرم کردی۔عدالتی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیپٹن(ر) محمدصفدرنے کہا کہآزادی مارچ آئین اور پارلیمان کو بچانے کے لئے جبکہ مہنگائی اور بے روزگاری کے خلاف ہے،سابق وزیر اعظم کی بیٹی کو جیل میں ڈال دیا گیا،مولانا فضل الرحمان کی تحریک آئین اور پاکستان بچانے کی تحریک ہے،مولانا فضل الرحمن کا آزادی مارچ نزدیک آ رہا ہے،اسی لئے مقدمات درج کئے جارہے ہیں۔

کیپٹن (ر) صفدر

مزید :

صفحہ آخر -