شام میں فوجی کارروائی کے بعد فرانس اور جرمنی نے ترکی کو اب تک کا بڑا جھٹکا دیدیا، اعلان کردیا

شام میں فوجی کارروائی کے بعد فرانس اور جرمنی نے ترکی کو اب تک کا بڑا جھٹکا ...
شام میں فوجی کارروائی کے بعد فرانس اور جرمنی نے ترکی کو اب تک کا بڑا جھٹکا دیدیا، اعلان کردیا

  



انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں ترکی نے کرد شدت پسندوں سے نجات کے لیے شام پر حملہ کیا اور ترک افواج کرد جنگجوﺅں کے زیرقبضہ علاقے میں پیش قدمی کر رہی ہیں۔ اب اس معاملے پر فرانس اور جرمنی نے ترکی کو بڑا جھٹکا دے دیا ہے۔ ڈیلی ڈان کے مطابق دونوں مذکورہ ممالک نے ترکی کو اسلحے کی برآمد فوری طور پر روکنے کا اعلان کر دیا ہے۔ جرمنی کے وزیرخارجہ ہیکو ماس کا کہنا تھا کہ ”شام پر ترکی کے حملے کے پیش نظر حکومت ترکی کو اسلحہ فروخت کرنے کا کوئی نیا اجازت نامہ جاری نہیں کرے گی، کیونکہ یہ اسلحہ شام کے خلاف استعمال کیے جانے کا امکان ہے۔“

جرمن وزیرخارجہ کی طرف سے یہ بیان جرمنی میں کرد پناہ گزینوں کی ترکی کے خلاف ریلی کے بعد سامنے آیا۔ واضح رہے کہ یورپی ممالک میں سے جرمنی میں سب سے زیادہ کرد پناہ گزین مقیم ہیں۔ فرانس کی طرف سے بھی ترکی کو اسلحے کی برآمد روکنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ فرانسیسی حکام کا بھی کہنا ہے کہ یہ اسلحہ شام کی کرد کمیونٹی کے خلاف استعمال ہو سکتا ہے۔ فرانسیسی وزارت خارجہ اور وزارت دفاع کی طرف سے جاری بیانات میں کہا گیا ہے کہ فرانس ایک مہم چلائے گا جس میں پورے یورپ کو قائل کیا جائے گا کہ وہ ترکی کو اسلحے کی فروخت روک دیں۔

مزید : بین الاقوامی