وزیر اعظم کی آیت اللہ خامنائی سے ملاقات ، کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کرنے پر ایرانی سپریم لیڈر سے اظہار تشکر

وزیر اعظم کی آیت اللہ خامنائی سے ملاقات ، کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت ...
وزیر اعظم کی آیت اللہ خامنائی سے ملاقات ، کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کرنے پر ایرانی سپریم لیڈر سے اظہار تشکر

  



تہران (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم عمران خان کی ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنائی سے ملاقات ،کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کرنے پر ایرانی سپریم لیڈر کا شکریہ ادا کیا۔

نجی نیوز چینل کے مطابق وزیر اعظم عمران نے ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنائی سے ملاقات کی اور کشمیریوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کرنے پر ایرانی سپریم لیڈر کا شکریہ ادا کیا ۔اس موقع پر وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ مسلم امہ کے درمیان اتحاد اور اخوت کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ مسلم امہ کو اندرونی اوربیرونی سطح پر مختلف چیلنجز درپیش ہیں۔ مسلم ممالک میں اتحاد اور یکجہتی کا پیغام عام کرنا اہم ہے ۔

واضح ہے کہ وزیر اعظم عمران خان ایران سعودی عرب میں مصالحت کی غرض سے ایک روز دورے پر ایران میں ہیں اور اس سے قبل ایرانی صدرحسن روحانی سے بھی ملاقات کرچکے ہیں۔وزیراعظم عمران خان نے ایرانی صدرڈاکٹر حسن روحانی کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب اور ایران کے تنازع کو سنجیدگی سے دیکھ رہے ہیں۔ سعودی عرب اور ایران تنازعہ سے خطے میں غربت میں اضافہ ہو گا۔ پاکستان کسی بھی تنازع کی حمایت نہیں کرے گا،مسائل کا حل مذاکرات سے نکالا جا سکتا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ سعودی اور ایران میں مسائل حل کرنے کااقدام پاکستان کا اپنا ہے ،پاکستان ثالث نہیں سہولت کار کا کردارادا کرے گا،انہوں نے کہا کہ صدر ٹرمپ نے ایران امریکہ میں بات چیت کیلئے سہولت کاری کیلئے کہا۔ وزیراعظم کا کہناتھا کہ دورہ امریکہ کے دوران ایران کشیدگی پر بات ہوئی تھی ، امریکہ کے ساتھ مذاکرات کیلئے ہر ممکن مدد کریں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان خطے میں مزید کشیدگی نہیں چاہتا،مخالفین چاہتے ہیں سعودی عرب اورایران میں کشیدگی بڑھے،انہوں نے کہا کہ ایران کیساتھ مستحکم تعلقات چاہتے ہیں ،وزیراعظم نے کہا کہ افغانستان ,عراق اورشام غیر مستحکم ہیں ،افغانستان بھی مشکل فیصلوں سے گزر رہا ہے۔عمران خان نے کہا کہ پاکستان نے دہشتگردی کے باعث لاکھوں جانیں گنوائیں،ایران کیساتھ پاکستان کے دیرینہ تعلقات ہیں ،سعودی عرب کے ساتھ بھی برادرانہ تعلقات ہیں ،سعودی عرب نے ہمیشہ مشکل حالات میں پاکستان کی مدد کی ۔

مزید : اہم خبریں /قومی