مولانا فضل الرحمان حکومت کو وکلاتحریک کی طرح کا جھٹکا دے رہے ہیں، ایاز امیر کا دعویٰ

مولانا فضل الرحمان حکومت کو وکلاتحریک کی طرح کا جھٹکا دے رہے ہیں، ایاز امیر ...
مولانا فضل الرحمان حکومت کو وکلاتحریک کی طرح کا جھٹکا دے رہے ہیں، ایاز امیر کا دعویٰ

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار ایاز امیر نے کہاہے کہ مشرف حکومت کو پہلا جھٹکا وکلاءتحریک نے دیا تھااور اب یہ جھٹکا مولانا فضل الرحمان پیدا کررہے ہیں، اگر دھرنا ہوا تو سیاسی کارکن وہاں آجائیں گے کیونکہ سیاسی دھرنے کو اس عمل سے دور نہیں کیا جاسکتا ۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”تھنک ٹینک“میں گفتگو کرتے ہوئے ایاز امیر نے کہا کہ حکومت اس لئے کمزور تھی کہ معاشی حالت خراب تھی لیکن جیسی اس حکومت کو سپورٹ حاصل ہے ، ایسے پہلے کبھی نہیں ہوا ۔ اس حکومت کواب بھی تمام اداروں کی مکمل سپورٹ حاصل ہے لیکن مو لانا فضل الرحمان نے حکومت کوجھٹکا دیدیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف چاہتے ہیں کہ ہلچل اور ہنگامہ ہو ۔ وہ چاہتے ہیں کہ مجھے جیل ایاز امیر کا کہنا تھا کہ اس سے قبل بھی جب مشر ف آیا تھا تو ن لیگ ختم ہوگئی تھی اور پیپلز پارٹی پرویز مشرف سے معاملہ کرناچاہتی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ مشرف پہلے دو سالوں میں جوچاہتے ، وہ کرسکتے تھے لیکن ان میں ویژن نہیں تھا ۔انہوں نے کہا کہ مشرف حکومت کو پہلا جھٹکا وکلاءتحریک نے دیا تھااور اب یہ جھٹکا مولانا فضل الرحمان پیدا کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر دھرنا ہوا تو سیاسی کارکن وہاں آجائیں گے کیونکہ سیاسی دھرنے کو اس عمل سے دور نہیں کیا جاسکتا ۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت خود مولانا فضل الرحمان کی مشہوری کررہی ہے اور مولانا فضل الرحمان کو کوئی اشتہار دینے کی ضرورت نہیں ہے ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور