فرانس اور جرمنی کی دھمکیوں پر ترک صدر بھی میدا ن میں آگئے ،دبنگ بیان دے دیا

فرانس اور جرمنی کی دھمکیوں پر ترک صدر بھی میدا ن میں آگئے ،دبنگ بیان دے دیا
فرانس اور جرمنی کی دھمکیوں پر ترک صدر بھی میدا ن میں آگئے ،دبنگ بیان دے دیا

  



استنبول(ڈیلی پاکستان آن لائن )ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ یورپی ممالک کی جانب سے اسلحے کی فروخت روکنے اور معاشی پابندیوں کی دھمکیاں ہمیں شام میں کارروائی سے نہیں روک سکتیں۔انہوں نے کہا کہ جب سے ہم نے شمال مشرقی شام میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن شروع کیا ہے، ہمیں معاشی پابندیوں اور اسلحے کی فروخت روکنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ جو لوگ ایسا سمجھتے ہیں کہ اس طرح کی دھمکیوں سے وہ ترکی کو روک سکتے ہیں تو وہ بہت بڑی غلطی کررہے ہیں۔ایک تقریب سے خطاب میں ترک صدر نے مصر اور دیگر عرب ممالک پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ مخلص نہیں، صرف باتیں بناتے ہیں جبکہ ہم ایکشن لیتے ہیں، ہم میں اور ان میں یہی فرق ہے۔اردوان کا مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے حوالے سے کہنا تھا کہ سیسی ترکی کی مذمت کیسے کرسکتے ہیں کیوں کہ ان کے دور میں تو مصر میں جمہوریت کا قتل ہوا۔

مزید : بین الاقوامی