خالد محمود نے باکسنگ کو تباہی کی راہ پر گامزن کر دیا ہے، عبداللہ رند

  خالد محمود نے باکسنگ کو تباہی کی راہ پر گامزن کر دیا ہے، عبداللہ رند

  

کوئٹہ(سپورٹس رپورٹر)سابق انٹر نیشنل گولڈ میڈلسٹ باکسر عبداللہ رند نے کہا ہے کہ باکسنگ کے کھیل کی الف ب سے بھی ناواقف پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے صدر خالد محمود کی آمرانہ سوچ اور پالیسیوں نے پاکستان میں باکسنگ کے کھیل کو تباہی کی راہ پر گامزن کردیا ہے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سابق انٹر نیشنل گولڈ میڈلسٹ باکسر عبداللہ رند نے باکسنگ کے کھیل کو تباہی سے بچانے کیلئے چیف جسٹس آف پاکستان گلزار احمد سے ازخود نوٹس لینے اور پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے اکا?نٹ کا فرانزک آڈٹ کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ باکسنگ پاکستان کی نوجوان نسل کا پسندیدہ کھیل رہا ہے جس کے ذریعے دْنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن ہوا، پاکستان کو سیف گیمز، ایشین گیمز، کامن ویلتھ گیمز، ورلڈ باکسنگ چمپئن شپ اور اولمپکس مقابلوں میں میڈلز دینے والے اس کھیل کو پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے چیئرمین دودا خان بھٹو کی کروڑوں روپے کی کرپشن، صدر خالد محمود اور سیکرٹری جنرل ناصر تنگ کی آمرانہ سوچ اور نااہل پالیسیوں نے تباہی کی راہ پر گامزن کردیا ہے۔

 سابق باکسر کا کہنا تھا کہ پروفیسر انور چوہدری کے انتقال کے بعد 4 سال تک باکسنگ کے سیکرٹری جنرل محمد اکرم خان اور خزانچی علی اکبر شاہ نے باکسنگ کو فروغ دینے میں اہم ترین کردار ادا کیا اور کئی کھلاڑیوں کو ملکی غیرملکی سطح پر متعارف کرایا، ان دونوں شخصیات نے باکسنگ کی بے پناہ خدمت کی لیکن جب پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر لیفٹیننٹ جنرل (ر) سید عارف حسن کی سر پرستی میں خالد محمود نے پاکستان باکسنگ فیڈریشن پر قبضہ کیا تو پھر اس کے بعد باکسنگ کے کھیل کی تباہی کا سلسلہ شروع ہوگیا جو آج کے دن تک جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ یہ تاثر دیتے ہیں کہ باکسنگ صرف دو صوبوں تک محدود ہے حالانکہ ایسا ہرگز نہیں ہے کیونکہ پوراپاکستان ہی باکسنگ کے ٹیلنٹ سے بھرا ہوا ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ پاکستان نے اپنے کم وسائل کے باوجود سیف گیمز، ایشین گیمز، کامن ویلتھ گیمز،ورلڈ باکسنگ چمپئن شپ اور اولمپکس میں میڈل حاصل کیے لیکن افسوس کہ پاکستان باکسنگ فیڈریشن کے چیئرمین دودا خان بھٹو، صدر خالد محمود اور سیکرٹری جنرل ناصر تنگ کی آمرانہ سوچ اور پالیسیوں کی وجہ سے باکسنگ کا کھیل تباہی کی راہ پر گامزن ہے۔انہوں نے سپورٹس مین وزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ باکسنگ کے کھیل سے سیاست ختم کرکے پاکستان باکسنگ فیڈریشن میں موجود نان ٹیکنیکل لوگوں کو فارغ کرکے حقیقی باکسنگ لورز کے حوالے کیا جائے تاکہ پاکستان مستقبل میں بھی باکسنگ کے ذریعے مزید میڈلز جیت سکے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -