ہائی کورٹ: دو گروپوں میں لڑائی‘ 15 ملزموں  کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری منظور

  ہائی کورٹ: دو گروپوں میں لڑائی‘ 15 ملزموں  کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری ...

  

 ملتان (خصو صی رپورٹر)ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر نے دو گروپوں میں لڑائی کے نتیجے میں 13 افراد(بقیہ نمبر80صفحہ 7پر)

 کے زخمی ہونے کے مقدمہ میں ملوث 15 ملزمان کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری منظور کرنے جبکہ دو ملزمان کی ضمانت خارج کرنے کا حکم دیا تھا ملزمان پر دو افراد کو شدید زخمی کرنے کا الزام تھا تاہم پولیس نے دونوں کو احاطہ عدالت سے ہی گرفتار کرلیا۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں میں پولیس تھانہ دراہمہ ڈیرہ غازی خان کے اے ایس آئی وسیم عباس نے مقدمہ کا ریکارڈ پیش کرتے ہوئے عدالت کو آگاہ کیا کہ 18 جون 2020 کو دو گروپوں میں پٹرول پمپ پر گھمسان کی لڑائی ہوئی تھی جس کے نتیجے میں 13 افراد زخمی اور دو شدید زخمی ہوئے ملزمان قاسم اور حافظ امیر بخش نے انہیں گہری ضرب لگائی تھی عدالت نے حنیف، بلال، اللّٰہ یار، سعید احمد ، اللّٰہ ڈیوایا، جاوید اقبال، حفیظ،جمال، ہاشم،غلام اکبر، ظفر، محمد نواز، ارشد، صفدر، نصر اللّٰہ، امان اللّٰہ، محمد امین اور شہباز کی ضمانت کنفرم کرنے جبکہ ملزمان قاسم اور حافظ امیر بخش ضمانتی خارج کرنے کا حکم دیا ہے جس پر پولیس نے دونوں ملزمان کو احاطہ عدالت سے ہی گرفتار کرلیا۔ جبکہ ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر نے قتل کے مقدمہ میں ملوث چار ملزمان کی عبوری ضمانت کنفرم جبکہ مرکزی ملزم محمد یوسف کی عبوری ضمانت منسوخ کرنے کا حکم دیا ہے۔ عدالت سے نکلتے ہی پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا ملزمان کی جانب سے ایڈووکیٹس محمد مالک خان لنگاہ اور بابر سعید نے پیروی کی۔ ملزمان نے دشمنی کی بنیاد پر ایک شخص محمد امین کو قتل کردیا تھا۔ سب انسپکٹر تھانہ ماچھیوال سردار محمد ارشد ریکارڈ کے ساتھ پیش ہوئے اور انہوں نے عدالت کو تفصیلات سے آگاہ کیا۔ ضمانت حاصل کرنے والے ملزمان میں علی حسن، سعید احمد، اختر علی اور زاہد شامل ہیں۔

منظور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -