آئی پی کے فروغ کیلئے برانڈ فاؤنڈیشن سے تعاون کرینگے:امین الحق

 آئی پی کے فروغ کیلئے برانڈ فاؤنڈیشن سے تعاون کرینگے:امین الحق

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے آئی ٹی اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن سید امین الحق نے کہا ہے کہ آئی پی کے فروغ کے لیے برانڈ فاؤنڈیشن اور انٹیلکچوئل پراپرٹی ایسوسی ایشن آف پاکستان (آئی پیپ) کے ساتھ ہر سطح پر تعاون جاری رہے گا۔میری وزارت حقوقِ دانش کے حوالے سے تمام مسائل کے حل میں بھر پور کردارادا کرے گی۔اس ضمن میں قانون سازی کی ضرورت پڑی تو وہ بھی کرائیں گے۔ ڈیجیٹل پاکستان ہمارا خواب ہے جس کی تکمیل کے لیے مختلف شعبوں میں کام کر رہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے  پہلے آئی پی ایکسیلینس ایوارڈ 2020 کی تقریب کے مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔قبل ازیں انہوں نے پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ حقوق دانش کی ملکیت رکھنے والے50 اداروں اور10 آئی پی کے ماہرین کو پاکستان آئی پی ایکسیلینس ایوارڈز (Pakistan IP Excellence Awards) سے نوازا۔ اس موقع پر سابق اٹارنی جنرل آف پاکستان جسٹس (ر)انور منصورخان،صدر کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریزشارق وہرہ،، چیئرمین ا نٹیلیکچوئل پراپرٹی ایسوسی ایشن (آئی پیپ)فرحان حنیف، صدر آئی پیپ طارق فیروز، رجسٹرار کاپی رائٹس سید نصراللہ، چیئرمین ایچ ایم آر گروپ حاجی محمد رفیق پردیسی، یمن کے اعزازی کونصل جنرل ڈاکٹر مرزا اختیار بیگ، سی ای اوعسکری گارڈ بریگیڈیئر (ر) عدنان عظیم،اوساکا کے سر براہ شمیم احمد اور برانڈ فا ؤنڈیشن کے سی ای او شیخ راشد عالم بھی موجود تھے۔ تقریب میں بزنس کمیونٹی کی نمائندہ شخصیات نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ قومی سطح پر پہلا آئی پی ایکسیلینس ایوارڈبرانڈ فاؤنڈیشن، آئی پیپ اور آئی پی او پاکستان کے اشتراک سے منعقد کیا گیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر آئی ٹی اینڈ ٹیلی کمیونی کیشن سید امین الحق نے مزید کہاکہ ہر گزرتے دن کے ساتھ دنیا میں ایجادات ہو رہی ہیں ہمیں یہ دیکھنا ہوگا کہ پاکستان کہاں کھڑا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ آئی پی کے شعبے کو تعلیمی اداروں میں متعارف کرانے کے لیے کوششیں جاری رکھی جائیں اس ضمن میں ان کی وزارت بھر پور تعاون فراہم کرے گی۔انہوں نے کراچی چیمبرآف کامرس کے ساتھ اشتراک عمل کو بڑھانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بزنس کمیونٹی کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں گے۔ 

مزید :

صفحہ آخر -