صوبہ بھر کی اقلیتی کمیونٹی کی ترقی اولین ترجیح،وزیر زادہ 

      صوبہ بھر کی اقلیتی کمیونٹی کی ترقی اولین ترجیح،وزیر زادہ 

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیرذادہ نے پیر کے روز ضلع مردان میں اقلیتی برادری کے مذہبی پیشواوٗں میں 30،30 ہزار کے 17 جبکہ 40,40 ہزار کے تین چیکس تقسیم کئے۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ بھر کی اقلیتی کمیونٹی کی ترقی ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع مردان اقلیتی برادری کے مذہبی پیشوا وٗں میں معاوضے کے چیکس تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ایم پی اے رنجیت سنگھ، ودیگر معززین بھی معاون خصوصی کے ہمراہ تھے۔ تقریب سے اپنے خطاب میں معاون خصوصی نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار تحریک انصاف کی حکومت میں اقلیتوں کی ترقی کے لئے مثالی اقدامات کیے جارہے ہیں۔اور اقلیتوں کے لیے صوبے کے سرکاری محکموں میں کوٹہ 5 فیصد تک بڑھایا جبکہ اقلیتی طلباء کے لئے بھی صوبے کے کالجوں میں  داخلہ کوٹہ 2 فیصد کر دیا ہے تاکہ اقلیتی کمیونٹی کے نوجوانوں کو اعلیٰ تعلیم کے زیور سے آراستہ کیا جاسکے۔ پاکستان میں تمام اقلیتوں کے لوگ خوش ہیں اور پاکستان کو اپنا وطن اور ملک سمجھتے ہے، یہاں تمام مذاہب کے لوگوں میں مثالی بھائی چارہ ہے۔جبکہ پڑوسی ملک بھارت میں تمام اقلیتوں کے حقوق کو پامال کیا جارہا ہے، وہاں پر نہ مساجد محفوظ نہ دوسری اقلیتوں کو حقوق مل رہے ہیں۔ وزیر زادہ نے کہا کہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کی ہدایات کی روشنی میں ہم صوبے کے چار ڈویژنز میں اقلیتوں کے لیے ہاؤسنگ سکیمز شروع کر رہے جس کے لئے تمام تر لوازمات پہلے سے مکمل کر لئے ہیں منصوبے کے تحت ہر ڈویژن میں ایک ایک ہزار گھر بنیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ محکمہ اقلیتی امور کی کوششوں سے ہم نے اقلیتی کمیونٹی کے ٹیکنیکل افراد اور خواتین کو اپنا کاروبار شروع کرنے کے لئے بھی فنڈز دئیے ہیں۔ جس کی رو سے اقلیتی برادری کے مستحق افراد اپنا کاروبار شروع کر سکیں گے۔ وزیراعلی خیبرپختونخوا کی قیادت اور وزیراعظم کے وژن کے مطابق صوبائی حکومت اقلیتوں کو ترقی دینے کی خوشحالی سے ہمکنار کرنے کیلئے ہے ہمہ وقت برسر پیکار ہیں۔ تقریب سے ایم پی اے روی کماراوردیگر نے بھی خطاب 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -