شیخوپورہ میں منافع خور بے قابو آٹا،چینی اور گوشت سمیت ہر چیز مہنگی

  شیخوپورہ میں منافع خور بے قابو آٹا،چینی اور گوشت سمیت ہر چیز مہنگی

  

     شیخوپورہ(بیورورپورٹ)شہراور مضافات میں آٹا،چینی،انڈے، سبزیاں،پھل،مرغی اور دیگر اشیاء خوردونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں،ڈسٹرکٹ گورنمنٹ مہنگائی کنٹرول کرنے میں بری طرح ناکام،ڈپٹی کمشنر کے گراں فروشی کے خاتمے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، غریب خریداروں کی گرانفروشوں کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لانے کی دہائی،سروے کے مطابق فروٹ وسبزی منڈی،خادم حسین روڈ پر ریڑھیوں، پھڑیوں، چوکوں اور چوراہوں میں پھل اور سبزیاں فروخت کرنے والوں نے خود ساختہ مہنگائی کا طوفان کھڑا کردیا،مارکیٹ کمیٹی کی جانب سے جاری کی جانے والی سرکاری ریٹ لسٹیں بھی غائب کردی گئیں،پرائس کنٹرول کمیٹیوں کی جانب سے بھی سب اچھا کا راگ لگایاجانے لگا، ادرک 500 سے 600 روپے فی کلوتک جا پہنچا،مرغی کی قیمت میں دودن کے اندر50روپے اضافہ،آٹا،گھی چینی سبزیاں اور پھل بھی غریبوں کی خرید سے باہر ہوکررہ گئیں، خریداروں کے مطابق   مارکیٹ کمیٹیوں،بیوروکریسی،ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کی ملی بھگت سے مبینہ طور پر مہنگائی کا جن بوتل سے باہر نکلا ہے،ہردکاندار کا علیحدہ علیحدہ ریٹ ہے۔ خریداروں کا کہناتھا کہ دالیں،گوشت،آٹا،گھی،مرغی کا گوشت،انڈئے،چینی اور دیگر اشیا خوردونوش کے ساتھ ساتھ گھریلوں استعمال میں لائی جانے والی ہر چیز کے مہنگی کر دی گئی ہے۔دکانداروں سے مہنگے داموں چیزیں فروخت کرنے کا سوال کریں تو وہ حکومت کو برابھلا کہتے ہوئے اپنا الو سیدھا کررہے ہیں۔ فرضی رپورٹس مرتب کرکے اعلیٰ حکام کو بھجوائی جارہی ہیں جبکہ عوامی سماجی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے مطالبہ کیا ہے کہ گرانفروشوں کونکیل ڈالی جائے اور اگر حکومت کے علم میں مہنگائی کنٹرول کرنے کی اہلیت نہیں ہے تو مہنگائی کنٹرول کرنے کے لیے تاجروں سے میٹنگ کی جائے اور جو دکاندار اشیاء خوردونوش کے مقررہ کردہ ریٹوں سے زیادہ میں اشیاء فروخت کرتا ہوئے پکڑا جائے اسکا کاروبار مکمل طورپر سیل کرکے پانچ سال کے لیے جیل بھیج دیا جائے۔

گرانفروش

مزید :

صفحہ آخر -