مرادعلی شاہ کو تاحیات نااہل قراردینے کی درخواست پر نوٹس کے باوجود جواب جمع نہ کرانے پرعدالت برہم 

مرادعلی شاہ کو تاحیات نااہل قراردینے کی درخواست پر نوٹس کے باوجود جواب جمع ...
مرادعلی شاہ کو تاحیات نااہل قراردینے کی درخواست پر نوٹس کے باوجود جواب جمع نہ کرانے پرعدالت برہم 

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کو تاحیات نااہل قراردینے کی درخواست پر نوٹس کے باوجود جواب جمع نہ کرانے پرعدالت برہم ہو گئی ،جسٹس محمد علی مظہر نے کہاکہ اگر درخواست ناقابل سماعت بھی سمجھتے ہیں تو تحریری جواب جمع کرائیں۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کو تاحیات نااہل قراردینے کی درخواست پر سماعت ہوئی،درخواستگزار کا موقف ہے کہ 2 مئی 2013 کو سپریم کورٹ نے مراد علی شاہ کو نااہل قراردیا، وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کو تاحیات نااہل قرار دیاجائے ۔

ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل سندھ شہریارمہر نے کہامراد علی شاہ 2014 میں ضمنی انتخابات،2018 میں انتخابات جیت کر منتخب ہوئے ، انتخابات سے قبل مرادعلی شاہ کے کاغذات نامزدگی بھی چیلنج کئے گئے تھے ، الیکشن ٹربیونل نے مراد علی شاہ کیخلاف درخواست مسترد کردی تھیں ۔

عدالت نے نوٹس جاری ہونے کے باوجود جواب جمع نہ کرانے پر برہمی کااظہارکیا،عدالت نے سرکاری وکیل سے استفسار کیاآپ الیکشن کمیشن کاجواب کیوںجمع نہیں کراتے؟، ایڈیشنل ایڈووکیٹ نے کہاکہ وزیراعلیٰ کو دہری شہریت کیس میں سرنڈر کرنے پر سپریم کورٹ نے کلیئرقراردیاتھا،جسٹس محمد علی مظہر نے کہاکہ اگر درخواست ناقابل سماعت بھی سمجھتے ہیں تو تحریری جواب جمع کرائیں ،عدالت نے فریقین کو جواب جمع کرانے کیلئے 17 نومبر تک مہلت دیدی۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -