لے اُڑا ایسے ترا دھیان مجھے | محمود شام |

لے اُڑا ایسے ترا دھیان مجھے | محمود شام |
لے اُڑا ایسے ترا دھیان مجھے | محمود شام |

  

لے اُڑا ایسے ترا دھیان مجھے 

تو بھی لگتی ہے اب انجان مجھے 

ہر صدا تیری صدا لگتی ہے 

کیا بتاتے ہیں مرے کان مجھے 

ریت کا ڈھیر بنا دے نہ کہیں 

دھوپ میں تپتا بیابان مجھے 

سنسناتے ہیں در و بامِ خیال 

کر گیا کون یہ ویران مجھے 

میں نے پہچان لیا ہے تجھ کو 

اب نہ کر مفت پریشان مجھے 

رچ گئی جس میں ترے درد کی دھوپ 

میں وہی شامؔ ہوں پہچان مجھے 

شاعر: محمود شام

Lay   Urra   Aisa   Tira    Dhayaan    Mujhay

Tu   Bhi   Lagti   Hay    Ab   Anjaan    Mujhay

 Har   Sdaa   Teri   Sadaa   Lagti   Hay

Kaya   Bataatay   Hen   Miray   Kaan   Mujhay

 Rait   Ka   Dhair   Banaa   Day   Na   Kahen

Dhoop   Men   Tapta   Bayabaan    Mujhay

 Sansunaatay   Hen   Dar-o-Baam -e-Khayaal

Kar   Gaya   Kon   Yeh   Hairaan    Mujhay

 Main   Nay     Pechaan    Liya   Hay Tujh   Ko

Ab   Na   Kar   Muft   Pareshaan   Mujhay

Rach   Gai   Jiss   Men   Tiray    Dard    Ki   Dhoop

Main   Wahi   Shaam   Hun   Pehchaan   Mujhay

Poet: Mehmood   Sham

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -