آزاد تجارتی زونز ترقی کا معاشی ترقی میں کردار

آزاد تجارتی زونز ترقی کا معاشی ترقی میں کردار
آزاد تجارتی زونز ترقی کا معاشی ترقی میں کردار

  

دنیا بھر کی ترقی میں آزادی تجارتی زونز کا کردار ایک مسلمہ حقیقت بن چکا ہے۔ ان تجارتی زونز میں بیرونی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کے لئے بہترین مسابقتی ماحول فراہم کیا جاتا ہے۔ برآمدات کے فروغ کے لئے ٹیکسوں میں چھوٹ دی جاتی ہے اور خام مال کے طور پر استعمال کے لئے لائے جانے والی اشیا پر کم سے کم درآمدی ڈیوٹی عائد کی جاتی ہے۔ اس کے ساتھ سکیورٹی، قرضوں، کاجسٹکس سمیت دیگر سہولیات کی فراہم نہ صرف سرمایہ کاروں کی آمدنی بڑھاتی ہے بلکہ تجارتی زون قائم کرنے والے ملک کی معیشت کا پہیہ بھی رواں دواں رہتا ہے۔ 

پاکستان میں  ایسے بہت سے مقامات ہیں جہاں آزاد تجارتی زونز کا قیام عمل میں لایا جاسکتا ہے۔ جس سے نہ صرف ملکی معیشت مضبوط ہوگی  بلکہ مقامی لوگوں کو روزگار کے مواقع بھی دستیاب آئیں گے۔ اس سلسلے میں چین  کے تجربات سے سیکھا جا سکتا ہے۔ جہاں چالیس برس قبل شین جن شہر میں چین  کا پہلا خصوصی اقتصادی زون تعمیر کیا گیا تھا جس کے بعد یہاں مثالی تعمیر و ترقی دیکھی گئی ہے۔گزشتہ برس 2019میں شہر کی سالانہ جی ڈی پی 2.69ٹریلین یوان تک پہنچ چکی ہے جبکہ فی کس جی ڈی پی بلندیوں کو چھوتے ہوئے 203,489یوان ہو چکی ہے۔ چھبیس اگست سنہ انیس سو اسی کو شین جن خصوصی اقتصادی زون کے قیام کی باضابطہ منظوری دی گئی تھی۔شین جن خصوصی اقتصادی زون کے قیام سے چین کو بیرونی دنیا سے منسلک کرنے کی راہ کو وسعت حاصل ہوئی ، جہاں اصلاحات و کھلے پن کو فروغ دینے کے لیے نئے سفر کا آغاز کیا گیا ہے۔ شین جن میں اصلاحات و کھلے پن کی پالیسی کی بدولت انتہائی تیزی سے ترقی ہورہی ہے اور معجزاتی اقتصادی ترقی کا مشاہدہ کیا گیا ہے : 

صرف چالیس برسوں کے دوران شین جن کی آبادی ایک کروڑ تیس لاکھ سے زائد ہو چکی ہے۔سال دو ہزار انیس تک شین جن کی مجموعی جی ڈی پی 26کھرب یوان سے تجاوز کر چکی ہے ، جس میں انیس سو اناسی کے مقابلے میں چودہ ہزار گنا اضافہ ہوا ہے۔برآمد ات کا کل حجم 29 کھرب یوان سے ذائد رہا ، جس میں 25 ہزار گنا اضافہ ہوا۔ شین جن میں فی کس جی ڈی پی دو لاکھ یوان سے تجاوز کر چکی ہے ، جو ملک بھر میں سر فہرست ہے۔ 

اگر اصلاحات و کھلا پن شین جن خصوصی اقتصادی زون کی معاشی ترقی کی بنیاد ہیں، تو بلاشبہ جدت شین جن کی ترقی کی ایک لازوال قوت ہے۔شین جن کی انتظامیہ نے ہمیشہ جدت کو اہمیت دی ہے ، کاروباری ماحول کی بہتری اور جدت کی حوصلہ افزائی کے لیے متعدد اقدامات اپنائے ہیں۔ اعدادوشمار کے مطابق رواں سال جولائی تک شین جن میں کاروباری اداروں کی کل تعداد چین کے دیگر بڑے اور درمیانے شہروں کی نسبت سرفہرست ہے۔ شین جن ایک متحرک مارکیٹ کا حامل شہر ہے۔ان کاروباری اداروں میں ہوا وے، داہ جیانگ جیسی قومی ہائی ٹیک انٹرپرائزز بھی شامل ہیں، جبکہ ایسے اداروں کی مجموعی تعداد 17 ہزار سے زائد ہے۔یہ ہائی ٹیک انٹرپرائزز فائیو جی مواصلات، تھری ڈی ڈسپلے، ڈرون اور نئی توانائی کی گاڑیوں سمیت دیگر شعبوں میں عالمی سطح پر سر فہرست ہیں۔ 

چین نے شین جن میں پائلٹ اصلاحات کا ایک منصوبہ جاری کیا ہے جس کے تحت شین جن شہر کو آئندہ پانچ برسوں میں چینی خصوصیات کے حامل سوشلزم کے تحت ایک مثالی شہر بنایا جائے گا۔ چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے جنرل آفس اور ریاستی کونسل کی جانب سے مشترکہ طور پر جاری دستاویز میں کہا گیا ہے کہ اس جامع منصوبے کی بدولت نئے عہد میں شین جن شہر میں کھلے پن کو مزید آگے بڑھایا جائے گا۔ 2020تا 2025تک تین مراحل پر مشتمل منصوبے کے تحت اہم شعبہ جات میں اصلاحات کے لیے شین جن شہر کو خصوصی آزادی دی گئی ہے۔منصوبے کے مطابق کاروباری ماحول کی مزید بہتری کے لیے خصوصی اقتصادی زون میں توانائی ،ٹیلی مواصلات ،عوامی خدمت ، ٹرانسپورٹ اور تعلیم کے شعبے میں خصوصی مراعات دی جائیں گی، بیرونی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کے لیے شفاف مسابقت کو یقینی بنایا جائے گا ، املاک حقوق دانش کا ایک نیا جامع نظام تشکیل دیا جائے گا، مالیات اور جہاز رانی کی صنعتوں میں کھلے پن کو مضبوط بنایا جائے گا ، بیرونی اداروں کی حوصلہ افزائی کی جائے گی کہ وہ سیکورٹیز اور فنڈ مینجمنٹ کمپنیاں قائم کریں۔ 

منصوبے کے مطابق کوشش کی جائے گی کہ 2035تک شین جن شہر کو عالمی معیار کی حامل اعلیٰ معیاری ترقی کی بدولت جدت ، کاروبار اور تخلیق کے ایک قومی نمونے میں ڈھالا جائے۔ 

شین جن خصوصی اقتصادی زون کے قیام کی 40 ویں سالگرہ کی مناسبت سے ایک شاندار تقریب 14 اکتوبر کی صبح صوبہ گوانگ ڈونگ کے شہر شین جن میں منعقد ہوگی۔چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے جنرل سیکرٹری ، صدر مملکت ، اور مرکزی فوجی کمیشن کے چیئرمین شی جن پھنگ تقریب میں شریک ہوں گے اور اہم خطاب کریں گے۔ 

چائنا میڈیا گروپ اور شن ہوا نیوز ایجنسی تقریب براہ راست نشر کریں گے جبکہ پیپلز ڈیلی آن لائن ، سی سی ٹی وی آن لائن ، اور چائنا نیٹ ورک جیسی اہم نیوز ویب سائٹس بھی تقریب کی کارروائی نشر کریں گی۔ 

۔

 نوٹ:یہ بلاگر کا ذاتی نقطہ نظر ہے جس سے ادارے کا متفق ہونا ضروری نہیں ۔

۔

اگرآپ بھی ڈیلی پاکستان کیساتھ بلاگ لکھنا چاہتے ہیں تو اپنی تحاریر ای میل ایڈریس ’zubair@dailypakistan.com.pk‘ یا واٹس ایپ "03009194327" پر بھیج دیں.

مزید :

بلاگ -