خواب تھا یا خیال تھا  کیا تھا?| مصحفی غلام ہمدانی |

خواب تھا یا خیال تھا  کیا تھا?| مصحفی غلام ہمدانی |
خواب تھا یا خیال تھا  کیا تھا?| مصحفی غلام ہمدانی |

  

خواب تھا یا خیال تھا  کیا تھا?

ہجر تھا یا وصال تھا کیا تھا?

میرے پہلو میں رات جا کر وہ

ماہ تھا یا ہلال تھا  کیا تھا?

چمکی بجلی سی پر نہ سمجھے ہم

حسن تھا یا جمال تھا کیا تھا?

جس کو ہم روزِ ہجر سمجھے تھے

ماہ تھا یا وہ سال تھا  کیا تھا ؟

مصحفی شب جو چپ تو بیٹھا تھا

کیا تجھے کچھ ملال تھا  کیا تھا?

شاعر: مصحفی غلام ہمدانی

(شعری مجموعہ:دیوانِ مصحفی ؛مرتبہ،نورالحسن نقوی، سالِ اشاعت،1966)

Khaab   Tha   Ya   Khayaal   Tha    Kaya   Tha?

Hijr   Tha   Ya   Visaal   Tha    Kaya   Tha?

 Meray    Pehlu   Men   Raat   Jaa    Kar   Wo

Maah   Taha   Ya   Hilaal   Tha    Kaya   Tha?

 Chamki   Bijli   Si   Par   Na   Samjhay   Ham

Husn   Tha  Ya   Jamaal   Tha    Kaya   Tha?

 Jiss   Ko   Ham   Roz-e- Hijr   Samjhay   Thay

?Maah   Tah   Ya   Wo   Saal   Tha    Kaya   Tha

 MASHAFI    Shab    Jo   Chup   Tu   Baitha   Tha

?Kaya    Tujhay    Kuchh   Malaal    Tha    Kaya   Tha

 Poet: Mashafi   Gulaam   Hamdani 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -