سابق سربراہان مملکت کے اخرجات کی تفصیل طلب،وزیراعظم کا کابینہ اجلاس میں بڑا فیصلہ 

سابق سربراہان مملکت کے اخرجات کی تفصیل طلب،وزیراعظم کا کابینہ اجلاس میں بڑا ...
سابق سربراہان مملکت کے اخرجات کی تفصیل طلب،وزیراعظم کا کابینہ اجلاس میں بڑا فیصلہ 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے سابق سربراہان کے اخراجات کی مد میں ہونے والے اخراجات کی تفصیل طلب کر لی۔وزیراعظم نے سربراہان مملکت کے اخراجات کے تعین بل لانے کی بھی ہدایت کی ہے۔ 

نجی چینل سماءنیوز کےمطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ سربراہان مملکت کے اخراجات کے تعین کے لیے بل لایا جائے، قانون سازی کے ذریعے صدر اور وزیراعظم کے اخراجات کے تعین کی بھی ہدایت کی ہے۔ وزیراعظم نے قانون سازی کے لیے مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کو ذمہ داری دے دی ۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ قانون سازی کے ذریعے صدر اور وزیراعظم کے اخراجات کا تعین ہونا چاہیے، صدر اور وزیراعظم کے اخراجات واجبی سے ہونے چاہیے۔ سابق سربراہان میں سے ایک نے صرف گھر کی چار دیواری پر 80کروڑ لگا دیئے ۔ وزیراعظم عمران خان نے بابر اعوان اور شفقت محمود کو سابق سربراہان مملکت کے اخراجات کی مد میں کتنے پیسے خرچ ہوئے، تفصیلات اکٹھی کرنے کی ہدایت کر دی۔ 

کابینہ کے اجلاس میں حلیف جماعت ایم کیو نے وزیراعظم سے اپنے اوپر ہونے والے مقدمات واپس لینے کی درخواست کی ہے۔ ایم کیو ایم کی جانب سے کہا گیا کہ حکومت اپنی حریف جماعت کے مقدمات واپس لے سکتی ہے توحلیف جماعت کے کیوں نہیں، سابق قائد کی تقریر دیکھ کر تالی بجانے پر مقدمہ بنایا گیا۔وزیراعظم عمران خان نے وزیرقانون اور وزیرداخلہ کو معاملہ دیکھنے کی ہدایت کر دی ۔ واضح رہے کہ جولائی 2015میں ایم کیو ایم پر بغاوت کے مقدمات درج ہوئے تھے،خالد مقبول ، عامر خان، وسیم اختر ، علی رضا عابدی، و دیگر مقدمات میں نامزد تھے۔ 

مزید :

قومی -