کشمیری سکھوں نے بھارتی مظالم کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا

کشمیری سکھوں نے بھارتی مظالم کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا
کشمیری سکھوں نے بھارتی مظالم کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا

  

سرینگر(ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں رہنے والے سکھوں نے بھی قابض بھارتی فوج اور مودی کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا۔سکھ رہنما بلدیوسنگھ نے کہا ہے کہ کشمیر میں سکھوں کے ساتھ زیادتی کی جارہی ہے، ہندوﺅں کو سکھوں پر ترجیح دی جاتی ہے۔

نجی چینل دنیا نیوز کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں رہنے والے سکھوں کی جانب سے مودی سرکار کے خلاف سرینگر میں ایک بہت بڑا مظاہرہ کیا گیا ہے۔ مظاہرے میں شریک سکھ کمیونتی کا کہنا تھا کہ ہم پر ظلم ہورہاہے، پریشانی سے زندگی گزاررہے ہیں، ہم کشمیر سے نکل جائیں گے۔ سکھ رہنما بلدیو سنگھ نے کہا کہ ہمارے ساتھ زیادتی کی جارہی ہے، ہر معاملے میں ہندوﺅں کو سکھوں پر ترجیح دی جاتی ہے۔ تین ہزار سکھوں کے کوٹے میں بھی ہمیں نوکریاں نہیں دی جا رہیں،ہماری قربانیوں کو نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

خیال رہے گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر کے علاقے رام باغ میں غاصب فوج نے دو مزید نوجوانوں کو سر چ آپریشن کی آڑ میں شہید کیا تھا۔ آپریشن کے دوران قابض بھارتی فوج نے موبائل اور انٹرنیٹ سروس بند کرکے گھر گھر تلاشی بھی لی۔کانگریس رہنما مانی شنکر نے کہا تھا کہ کشمیری مودی کے 5 اگست کے اقدامات سے شدید ردعمل دے سکتے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -