کیا واقعی پب جی کھیلنے والے کو تجدید نکاح کرنا پڑے گا؟جامعہ بنوری کے فتوے پر مفتی زبیر بھی میدان میں آگئے

کیا واقعی پب جی کھیلنے والے کو تجدید نکاح کرنا پڑے گا؟جامعہ بنوری کے فتوے پر ...
کیا واقعی پب جی کھیلنے والے کو تجدید نکاح کرنا پڑے گا؟جامعہ بنوری کے فتوے پر مفتی زبیر بھی میدان میں آگئے

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان میں پب جی گیم ایک بار پھر متنازعہ ہو گئی، مفتی زبیر محمود نے کہا ہے کہ پب جی کھیلنا ناجائز اور حرام ہے ۔بچوں کی ذہنی اور جسمانی صحت پر اثرات پڑرہے ہیں۔ 

نجی چینل سماءنیوز کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے مفتی زبیر نے کہا ہے کہ پب جی گیم کھیلنا ناجائز اور حرام ہے، پب جی کھیلنے سے اجتناب کرنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ اس گیم سے ہمارے بچوں کے ذہنی اور جسمانی صحت پر برے اثرات پڑ رہے ہیں، گیم کھیلنے والا کفر پر رضامندی کا اظہار نہیں کرتا۔ ان کا کہنا تھا کہ گیم کھیلنے والوں کے لیے تجدید ایمان اور نکاح کی ضرورت نہیں۔

خیال رہے کہ جامعہ علوم اسلامیہ بنوری ٹاﺅن کی جانب سے فتوی جاری کیا گیا تھا کہ پب جی گیم کھیلنا حرام ہے۔ بتوں کے سامنے جھک کر پاور حاصل کرنا شرک کے زمرے میں آتا ہے۔ فتوی میں کہا گیا تھا کہ گیم کھیلنے والوں کے لیے تجدید ایمان و نکاح ضروری ہے۔ 

مزید :

قومی -