سپریم کورٹ کا وفاقی حکومت کو شام تک چیئرمین نیب کے تقررکاحکم, جلدازجلد تقررکریں یا نتائج بھگتنے کوتیارہوجائیں : چیف جسٹس

سپریم کورٹ کا وفاقی حکومت کو شام تک چیئرمین نیب کے تقررکاحکم, جلدازجلد ...
سپریم کورٹ کا وفاقی حکومت کو شام تک چیئرمین نیب کے تقررکاحکم, جلدازجلد تقررکریں یا نتائج بھگتنے کوتیارہوجائیں : چیف جسٹس

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت کو جلد ازجلد قومی احتساب بیورو(نیب) کے چیئرمین کی تقرری کا حکم دے دیااور اپنے ریمارکس میں کہاکہ نیب مکمل طورپر غیر فعال ہوچکاہے ، جلد ازجلد چیئرمین کا تقررکریں یانتائج بھگتنے کو تیار ہوجائیں ۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے چیئرمین نیب تقرری کیس کی سماعت کی ۔دوران سماعت چیف جسٹس نے کہاکہ نیب مکمل طورپر غیر فعال ہوچکاہے ، حکومت کو اگر ادارہ بند کرناہے تو ایک لائن لکھ کر دے دیں۔ اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایاکہ قائدحزب اختلاف بیرون ملک ہیں جس کی وجہ سے تقرری میں تاخیر ہوئی ، عدالت مزید ایک ہفتے کی مہلت دے ۔ چیف جسٹس نے کہاکہ نیب کو فعال کرنے کی ذمہ داری وفاق کے کندھوں پر ہے ، غیرسنجیدہ حکومتی رویہ سے معاملات خراب ہورہے ہیں ۔ عدالت نے تقرری کا معاملہ انتظامیہ پر چھوڑے ہوئے کہاکہ چیئرمین کی تقرری جلد ازجلد یقینی بنائی جائے ، ہرتاریخ پر مزید وقت مانگنامناسب نہیں ۔ ایک موقع پر چیف جسٹس نے اٹارنی جنرل سے مکالمے میں کہاکہ ہمیں آپ کے ایجنڈے کا علم ہے ، آپ ایجنڈے پر عمل کرتے تو بہت سے لوگ اب تک جیل میںہوتے،عہدہ خالی ہونے کی وجہ سے کئی میگاسکینڈلز کی تحقیقات رکی ہوئی ہیں ۔عدالت نے پرنسپل سیکریٹری کو بیان کی اجازت نہیں دی اور کہاکہ سیکریٹری کو نوٹس جاری نہیں کیاگیا، اٹارنی جنرل کی موجودگی میں پرنسپل سیکریٹری بیان نہیں دے سکتے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں