پاکستان اورچائنہ سی پیک کے ذریعے ایک دوسرے کو ترقی دیں گے ،ناصر ظفر

پاکستان اورچائنہ سی پیک کے ذریعے ایک دوسرے کو ترقی دیں گے ،ناصر ظفر

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)پنجاب یونیورسٹی وائس چانسلر پر وفیسر ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے سی پیک پر ہونے والی دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اورچائنہ سی پیک کے ذریعے ایک دوسرے کو ترقی دیں گے اور ہمیں پاکستان میں چائنہ کے ترقیاتی منصوبے کو سراہنا چاہیے ۔ وہ پنجاب یونیورسٹی شعبہ تاریخ اور مطالعہ پاکستان کے زیر اہتمام ’چائنہ پاکستان اقتصادی راہداری منصوبہ (سی پیک)کے سیاسی ، اقتصادی اور سماجی پہلو‘کے موضوع پر دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس کے اختتامی سیشن سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر ڈین فیکلٹی آف آرٹس اینڈ ہیومینیٹیز پروفیسر ڈاکٹر اقبال چاولہ ودیگر بھی موجود تھے۔

، نین جنگ یونیورسٹی کے نائب صدر پروفیسر ڈاکٹر زو چنگ پاوٗ، یونیورسٹی آف سوشل سائنسز اینڈ ہیومینیٹز وارسا پولینڈ سے پروفیسر ڈاکٹر اگنیزکا کزیوسکا ، پروفیسر ڈاکٹر سیف اللہ چیمہ، ڈاکٹر محبوب حسین، ملکی و غیر ملکی محققین ، فیکلٹی ممبران اور طلباؤ طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے کہا ہے کہ کوئی بھی ملک پاکستان میں سرمایا کاری کے لئے تیار نہیں تھا لیکن چائنہ نے ملک میں چھیالیس بلین ڈالر کی کثیر رقم خرچ کر کے کئی منصوبوں کا آغاز کیا ہے جس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کے ذریعے دونوں ممالک درآمدات اوربرآمدات کیلئے نئی راہیں ہموار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی عوام غربت کا شکار ہے اور سی پیک ملک میں خوشحالی لائے گا انہوں نے کہا کہ سی پیک انٹگریٹڈ سٹڈی سنڑ پنجاب یونیورسٹی کے ذریعے سی پیک کا مثبت رخ بین الاقوامی برادری کے سامنے لایا جائے گا اور سی پیک کے خلاف ہونے والے منفی پروپگینڈے کو ختم کیا جائے گا۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوے پرو فیسر ڈاکٹراگنیسزکا کسزیسکا نے کہا کہ پاکستان محل وقوع کے اعتبار سے اہم خطے میں واقع ہے اور ایک ایٹمی ملک ہے۔ جس کی وجہ سے پاکستان بین الاقوامی طور پر ایک اہم ملک مانا جاتا ہے انہوں نے کہا کہ سی پیک سے نہ صرف چین اور پاکستان بلکہ دنیا کے کئی ممالک استفادہ کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک پاکستان کی ترقی میں بنیادی کردار ادا کرے گا۔ پروفیسر ڈاکٹر زو چنگ پاوٗ نے کہا کہ پاکستان اور چین کی یونیورسٹیوں کو مشترکہ فریم ورک تحت دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید فروغ دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ کانفرنس میں مختلف معاشی، سماجی اور جغرافیائی موضوعات کا احاطہ کیا گیا ہے جس سے کانفرنس کے شرکاء نے بھرپور استفادہ کیا ہے۔ پروفیسر ڈاکٹر اقبال چاولہ نے کہا کہ کانفرنس کے 9 سیشنز میں پانچ ممالک کے محققین نے اپنے مقالہ جات پیش کئے اور ملک بھر سے سکالرز نے شرکت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانفرنس ایک دوسرے سے سیکھنے کے لئے ایک سنہری موقع ثابت ہوئی ہے اور مستقبل میں بھی ایسی کانفرنسز کا انعقاد کیا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -