جمہوریت کے دعویداروں کا آمرانہ رویہ قابل مذمت,اساتذہ پر پولیس تشدد، لاٹھی چارج اور گرفتاریاں انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے:ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی

جمہوریت کے دعویداروں کا آمرانہ رویہ قابل مذمت,اساتذہ پر پولیس تشدد، لاٹھی ...
جمہوریت کے دعویداروں کا آمرانہ رویہ قابل مذمت,اساتذہ پر پولیس تشدد، لاٹھی چارج اور گرفتاریاں انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے:ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی

  

کرا چی (ڈیلی پاکستان آن لائن)جماعت اسلامی سندھ کے امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے کراچی میں اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج کرنے والے اساتذہ پر پولیس تشدد، لاٹھی چارج اور گرفتاریوں کی سخت مذمت کرتے ہوئے اسے بدترین آمریت او ر انسانی حقوق کی خلاف ورزی قراراور مطالبہ کیا کہ حکومت طاقت کی استعمال ل کی بجائے اساتذہ کے مطالبات کو سننے اور اس پر نظرثانی اور گرفتار اساتذہ کو رہا کیا جائے۔

مزید پڑھیں:قوانین کی خلاف ورزی : فیس بک پر 14لاکھ 40ہزار ڈالر جرمانہ عائد

انہوں نے  کہا کہ اساتذہ کرام کوکسی بھی ملک و معاشرے میں بڑی احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے مگر یہاں احتجاج کرنے والے اساتذہ کے مطالبات کو سنجیدگی کے ساتھ سننے کی بجائے تشدد وگرفتاریاں افسوس ناک اور قابل مذمت ہے،معزز پیشہ سے وابستہ افراد کے ساتھ ناورا سلوک جمہوریت کے دعویدار وں کے منہ پر طمانچہ ہے،حالیہ واقعہ نے دور آمریت کی یاد تازہ کردی ہے، میرٹ کا قتل اور اقرباپروری کی بنیاد پر تعلیم کے شعبہ میں بھرتیوں سے پہلے ہی تعلیم کا شعبہ تباہ ہے، پہلے بھاری رشوت لیکرحد سے زیادہ تدریسی غیر تدریسی عملہ بھرتی کیا جاتا ہے مگر جب وہ تنخواہ ودیگر مطالبات کرتے ہیں تو وہی حکومت ان پر لاٹھیاں برساتی ہے،یہ کہاں کا انصاف ہے؟اسلئے حکومت آمرانہ روش کی بجائے سنجیدگی کے ساتھ احتجاج کرنے والے اساتذہ کے مسائل کو سننے اور تعلیم کی بہتری کیلئے اقدامات کرے۔

مزید :

کراچی -