یمن:یونیورسٹی کی رقم کی چوری میں حوثی وزارت مالیات کا سکریٹری ملوث

یمن:یونیورسٹی کی رقم کی چوری میں حوثی وزارت مالیات کا سکریٹری ملوث

  

صنعاء(این این آئی)حوثی ملیشیا نے اپنی حکومت میں ایک رہ نما کو وزارت مالیات کا سکریٹری مقرر کیا ہے جس پر اِب یونی ورسٹی کے خزانے سے رقم چوری کرنے کا الزام ہے۔ واضح رہے کہ حوثیوں کی یہ حکومت بین الاقوامی سطح پر غیر تسلیم شدہ ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق صنعاء میں باغی اتحاد کی سپریم سیاسی کونسل کے سربراہ صالح الصماد نے حوثی رہ نما اور اِب یونی ورسٹی کے استاد اکرم الوشلی کے وزارت مالیات میں بطور سکریٹری تقرر کا فیصلہ جاری کیا۔یاد رہے کہ اکرم محمد علی الوشلی پر جن کو اس سے پہلے اِب یونی ورسٹی کے چیئرمین کا نائب مقرر کیا گیا تھا 2016 کے اواخر میں یونی ورسٹی کے خزانے سے بھاری رقم کی چوری میں ملوث ہونے اور کارروائی میں سہولت کار بننے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔ یہ صوبے میں مالی رقوم کی چوری کی سب سے بڑی کارروائی تھی۔اِب یونی ورسٹی کے ذرائع کے مطابق یونی ورسٹی کے خزانے سے چوری کے عمل میں حوثی رہ نما الوشلی کے ملوث ہونے کے شواہد ملنے کے بعد حوثیوں کی طرف سے جاری احکامات پر اس مجرمانہ کارروائی کی تحقیقات روک دی گئیں اور اس معاملے کو دفن کر دیا گیا۔

گزشتہ برس دسمبر کے اواخر میں اِب یونی ورسٹی کے خزانے میں چوری کی منظم کارروائی عمل میں آئی جس کے پیچھے یونی ورسٹی کے اندر کے افراد کا ہاتھ تھا۔ خزانے میں موجود مجموعی طور پر 27 کروڑ یمنی ریال لْوٹے جانے کا اعلان کیا گیا جن میں امریکی ڈالر کی صورت میں کرنسی بھی شامل تھی۔

، جسے اغوا کیے گئے چار کمرشل جیٹ طیاروں میں سے ایک نے شدید نقصان پہنچایا۔ پینٹاگان کے سامنے منعقدہ تقریب میں ٹرمپ نے کہا کہ اْس سیاہ دِن کی دہشت گردی اور برہمی ہماری یادداشت کا ایک مستقل حصہ بن چکی ہے۔ہلاک شدگان کا حوالہ دیتے ہوئے، ٹرمپ نے کہا کہ ہم اْن کے لیے تعزیت کرتے ہیں، ہم اْنھیں عزت کی نگاہ سے یاد کرتے ہیں، ہم اس بات کا عہد کرتے ہیں کہ ہم اْنھیں کبھی بھی نہیں بھلائیں گے۔وزیر دفاع جِم میٹس نے کہا کہ 2001ء کے حملوں کے بعد ہماری قوم مضبوطی سے یک جان ہو کر کھڑی ہوگئی۔ بہادری اور ہمدردی کے مثالی جذبات دیکھے گئے۔نائب صدر مائیک پینس پنسلوانیا کے شہر شینکس ویل گئے جہاں ہائی جیک ہونے والا دوسرا طیارہ گر کر تباہ ہوا۔ادھر اپنے بیان میں امریکی وزیر خارجہ ٹلرسن نے کہا کہ امریکہ 11 ستمبر 2001ء کے دہشت گرد حملوں میں ہلاک ہونے والوں کو یاد کرتا ہے، جب کہ اْن دلیروں کو عزت کی نگاہ سے دیکھتا ہے جنھوں نے دلیری سے لڑتے ہوئے کئی جانیں بچائیں، یہاں تک کہ اْنھوں نے اپنی جانیں تک نثار کر دیں۔گیارہ ستمبر کے دہشت گرد حملوں کی برسی کے موقع پر، اْنھوں نے کہا کہ امریکی قوم کی دلیری کی رقم کردہ مثالیں شیطانی عمل کا سامنا کرنے کے دوران حوصلہ مندی کی علامت بن چکی ہیں۔بقول اْن کے حالانکہ اْس روز ہمارا ملک زخمی ہوا، آج ہم دنیا کو یہ بات یاد دلانا چاہتے ہیں کہ دہشت گردی کے ہتھکنڈوں سے امریکہ کو کبھی شکست نہیں دی جا سکتی۔

مزید :

عالمی منظر -