آسٹریا کے ساتھ بہتر تجارتی تعلقات کا فروغ چاہتے ہیں : ایف پی سی سی آئی

آسٹریا کے ساتھ بہتر تجارتی تعلقات کا فروغ چاہتے ہیں : ایف پی سی سی آئی

  

لاہور(کامرس رپورٹر) پاکستان ، آسٹریا کے ساتھ بہتر تعلقات کے ساتھ ساتھ تجارت کا فروٖغ چاہتا ہے ، پا کستان میں سرمایہ کاری کرنے کے بہترین مواقع موجود ہیں جن میں سیاحت ، انفارمیشن ٹیکنلوجی، ٹیکسٹائل، ڈیری ، زراعت، روئی، چاول اور معدنیات سمیت دیگر شعبوبے نمایاں ہیں۔ ایف پی سی سی آئی کی 140 ممالک کے ساتھ مشترکہ بزنس کونسلز ہے جن میں سے ایک بزنس کونسل آسٹریاکے ساتھ بھی ہے جس کا مقصد دو طرفہ باہمی تجارت اور کاروبار کا فروٖغ ہے۔ پاکستان کی آسٹریا کے ساتھ برآمدات کم اور درآمدات زیادہ ہیں۔ہمیں برآمدات میں اضافہ کیلئے اقدامات کرنے ہو گئے۔ ان خیالات کا اظہار فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری( ایف پی سی سی آئی) ریجنل چےئرمین و نائب صدرمنظور الحق ملک نے آسٹریا کے کاروباری وفد کی ایف پی سی سی آئی کے دورہ کے موقع پر ملاقات کے دوران کیا۔اجلاس میںآل پاکستان بزنس فورم کے صدر ابرہیم قریشی ، کینڈاپاکستان بزنس کونسل کے چےئرمین سمیر ڈوسل ، ڈریکٹر پنجاب بورڈ آف انو یسٹمنٹ راشد ترابی اور نائب صدر ایف پی سی سی آئی معصومہ سبطین کے علاوہ دیگر کاروباری شعبہ سے وابسطہ افراد نے شرکت کی۔آسٹرین ٹریڈ وفد کے سربراہ اور آسٹرین ٹریڈ کمشنر مسٹر ریچرڈ بینڈرا نے کہا کہ میرا مقصد پاکستان کے ساتھ بہتر کاروباری تعلقات پیدا کرنا اور برآمدات کو دوگنا کرنا ہے ۔

ہم پاکستان کو مکمل سپورٹ کرتے ہیں اور مستقبل میں پاکستانی کاروباری افراد کے ساتھ کاروبار کرنے کے خواں ہیں۔ انہو ں نے مزید کہا کہ ہم نے 150 ممالک میں کاروباری دفاتر قائم کئے ہیں اور پاکستان میں بھی ایک کاروباری دفتر قائم ہے۔ایف پی سی سی آئی کے علاوہ مختلف سرکاری دفاتر کے بھی دورے کئے جو کافی سود مند رہے۔ پاکستان ایک پر امن اور خوبصورت ملک ہے اور یہاں کی تہذیب و ثقافت بہت عمدہ ہے۔آل پاکستان بزنس فورم کے صدر ابرہیم قریشی نے کہا کہ پاکستان بزنس ٹوبزنس کی بہت بڑی مارکیٹ ہے

،سرمایہ کاری کے بھی بہت سارے مواقع موجود ہیں ۔ اس حوالے سے ایف پی سی سی آئی اور اے پی بی ایف مکمل سپورٹ دینے کے لیے تیار ہے۔

انہوں نے کہا کے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تعاون کو پروان چڑھنا چاہئے اور نئے نئے مواقعوں کو تلاش کر کے ان سے فائدہ حاصل کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو مزید بہتر بنا کر باہمی تجارت کو فروغ دیا جا سکتا ہے۔

مزید :

کامرس -