کاروباری خواتین کے لئے سرمائے کی کمی دور کی جائے: ویمن چیمبر

کاروباری خواتین کے لئے سرمائے کی کمی دور کی جائے: ویمن چیمبر

  

لاہور(کامرس رپورٹر)ویمن چیمبر آف کامرس نے مطالبہ کیا ہے کہ کاروباری خواتین کے لئے سرمائے کی کمی دور کرنے کی حکومت کو ترجیحی بنیادوں پر توجہ دینی ہو گی خواتین کی معاشی سرگرمی میں شامل کئے بغیر دیرپا ترقی نہیں ہو سکتی ان خیالات کا اظہار ویمن چیمبر کی صدر شازیہ سلیمان اور دیگر ممبران نے لاہور اکنامک جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے اراکین سے گفتگو میں کیا۔اس موقع پر سینئر رہنماء قیصرہ شیخ سمیت دیگر کاروباری خواتین بھی موجود تھیں۔شازیہ سلیمان کا کہنا تھا کہ حکومت معاشی ترقی کے دعوے کر رہی ہے لیکن برآمدات میں مسلسل کمی ہو رہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ویمن چیمبر کے بارہ سو سے زیادہ ممبران ہیں جن کو سب سے بڑا مسئلہ سرمائے کی کمی کا ہے اور حکومتی ادارے خواتین کے مسائل پر سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں کرتے۔سرکاری سطح پر جو نمائشوں کے لئے وفود جاتے ہیں ان میں بھی خواتین کو نظر انداز کیا جاتا ہے۔شازیہ سلیمان کا کہنا تھا کہ جس ملک نے بھی ترقی کی ہے اس میں خواتین کو زیادہ مواقع دیے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ خواتین کو ان کے پاؤں پر کھڑا کرنے کے لئے معاشی خود مختاری دیں اور ایسا ماحول دیں جس میں خواتین بلا تفریق مردوں کے شانہ بشانہ کام کریں۔

شازیہ سلیمان کا کہنا تھا کہ حکومتوں کی پالیسیوں میں تسلسل ہونا چاہئے اور خواتین کو آسان شرائط پر قرضے ملیں اور برآمدی شعبے میں زیادہ مواقع دیئے جائیں۔ان ک کہنا تھا کہ خصوصی پیکج دیے جائیں شازیہ سلیمان نے کہا کہ بجٹ تجاویز حکومت لیتی تو ہے لیکن ان کو بجٹ میں شامل نہیں کیا جاتا۔انہوں نے کہا کہ سی پیک بڑا منصوبہ ہے اس کی اہمیت سے خواتین کو آگاہی دینی چاہیے تاکہ اس منصوبے کے فوائد دور رس ہوں۔

مزید :

کامرس -