ن لیگ اور پیپلزپارٹی کو فارن فنڈنگ پارٹیاں قرار دیا جائے، تحریک انصاف

ن لیگ اور پیپلزپارٹی کو فارن فنڈنگ پارٹیاں قرار دیا جائے، تحریک انصاف

  

اسلام آباد(اے این این ) پاکستان تحریک انصاف نے مسلم لیگ(ن) اور پیپلزپارٹی کو فارن فنڈنگ پارٹیاں قرار دینے کیلئے سپریم کورٹ میں درخواستیں دائر کردی ہیں۔ منگل کے روز تحریک انصاف کے رہنماؤں نے مسلم لیگ(ن) اور پاکستان پیپلزپارٹی کے غیر ملکی فنڈز پر اعتراضات اٹھاتے ہوئے دو الگ الگ درخواستیں عدالت عظمیٰ میں دائر کیں۔ تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے (ن) لیگ کے خلاف اور شیریں مزاری نے پیپلزپارٹی کیخلاف درخواست جمع کروائی۔درخواستوں میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ(ن) لیگ اور پیپلز پارٹی نے غیر ملکی اور ممنوعہ ذرائع سے فنڈز حاصل کئے، نواز شریف نے(ن) لیگ کو دس کروڑ روپے کے فنڈز دئے اور چار کروڑ واپس لئے تاہم(ن) لیگ کی الیکشن کمیشن میں جمع تفصیلات میں ان فنڈز کا ذکر نہیں جبکہ پیپلزپارٹی نے پاکستانی سفارتخانے کے ذریعے فنڈز لئے ہیں لیکن اس سے متعلق الیکشن کمیشن کو آگاہ ہی نہیں کیا گیا۔درخواستوں میں موقف اختیار کیا گیا کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ نے امریکا میں فارن فنڈنگ کیلئے نجی کمپنیوں سے معاہدے کر رکھے ہیں۔درخواستوں میں استدعا کی گئی ہے کہ سپریم کورٹ دونوں جماعتوں کو فارن فنڈڈ پارٹیاں قرار دے اور الیکشن کمیشن کو دونوں جماعتوں کے فنڈز کی تحقیقات اور انتخابی نشان واپس لینے کا حکم دے۔واضح رہے کہ تحریک انصاف کے خلاف الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ میں پہلے ہی غیر ملکی اور ممنوعہ فنڈنگ کے مقدمات زیر سماعت ہیں جن میں تحریک انصاف جواب داخل کرنے اور ریکارڈ دینے میں ابھی تک کامیاب نہیں ہو سکی ۔

تحریک انصاف

مزید :

علاقائی -