اغواء کے مقدمہ میں پیش نہ ہونے پرایم پی اے ظہیر الدین علیزئی سمیت 5 ملزموں کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری گرفتار کر کے16ستمبر کو عدالت پیش کرنے کا حکم

اغواء کے مقدمہ میں پیش نہ ہونے پرایم پی اے ظہیر الدین علیزئی سمیت 5 ملزموں کے ...

  

ملتان ( خبر نگار خصوصی) جج انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت ملتان نے اغواء کے مقدمہ میں پیش نہ ہونے پرایم پی اے ظہیر الدین علیزئی سمیت 5 ملزموں کے ناقابل ضمانت(بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

وارانٹ گرفتاری جاری کرتے ہو ئے آرپی او ملتان کومذکورہ ایم پی اے کو گرفتار کر کے16ستمبر کو عدالت پیش کرنے کا حکم دیاہے۔یادرہے کہ سابق ڈپٹی کمشنر محمدمنیربدراعوان نے تھانہ چہلیک میں 14 اکتوبر 2015 ء کو آسٹریلین گائے سپلائی کرنے کے کاروبارکرنے کی ترغیب دے کر ایک کروڑ3 لاکھ روپے اینٹھ لینے اورقانونی کارروائی کرنے پر بیٹے محمدمہرمنیرکو خفیہ ایجنسی کے اہلکارظاہرکرکے اغواء کرنے کامقدمہ درج کرایاجس میں ایک خاتون سمیت پولیس اہلکاربھی ملوث تھے اورمقدمہ میں پاکستان تحریک انصاف کے حلقہ 194 ملتان سے منتخب ممبر صوبائی اسمبلی ظہیر الدین علیزئی کے خلاف پنچائیت کرانے اورتاوان کی رقم ان کے اکاؤنٹ سے ملزم محمدمدثر کوٹرانسفرکرنے کے الزامات عائدکئے گئے تھے۔تاہم اب مقدمہ میں پیش نہیں ہونے پر مذکورہ ایم پی اے کے علاوہ ملزموں زاہدپٹھان،مبشر،جہانزیب اوریاسمین مائی کے بلاضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرکے آرپی اوملتان کوتعمیل کے لئے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔

ایم پی اے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -