آنگ سان سوچی پر عالمی عدالت میں مقدمہ چلایا جائے،ملک فتح خان

آنگ سان سوچی پر عالمی عدالت میں مقدمہ چلایا جائے،ملک فتح خان

  

راولپنڈی(نیوز رپورٹر)آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک ورکر لیبر یونین کے عہدیداران نے برما میں مسلمانوں کی نسل کشی اور ان پر مسلط دہشت گردی کی سخت مذمت کرتے ہوئے روہینگیا کے مسلمانوں پر مظالم بند کرنےآنگ سان سوچی پر عالمی عدالت میں مقدمہ چلانے اور اُن سے امن کا نوبل انعام واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے انسانی حقوق کے چیمپئن آج مسلمانوں کے خلاف ہونے والے مظالم پر خاموش کیوں ہیں، او آئی سی اور فوجی اتحاد برما میں مسلمانوں کے خلاف جاری آگ و خون کے کھیل کو بند کرانے کے لیے موثرآواز بلند کرے۔ ان خیالات کا اظہار رونل چیئرمین ملک فتح خان،راجہ وراثت علی،ملک قمر کلیامی نے برما کے مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے بختیار لیبر ہال میں منعقدہ ہنگامی اجلاس خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر راجہ کامران سلیم،چوہدری لیاقت،چوہدری اکرم،چوہدری آصف،سجاد حسین ساجد،وہاب خان، عتیق ستی، راجہ مظہر شمیم،ارشد میر اور امجدخان بھی موجود تھے ۔ زونل چیئرمین ملک فتح خان نے کہا کہ برما کے مسلمانوں پر انسانیت سوز مظالم نے لرزہ طاری کردیا ہے،اقوام متحدہ مذمت سے کام نہیں چلائے اقوام متحدہ پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ روہنگیائی مسلمانوں کو تحفظ اور شہریت دلائے اور ظلم وستم کو روکے، انہوں نے حکومت سے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا کہ وہ پاکستان برمی سفارت خانے کو فوری طور پربندکرکے اس کے سفیرکو بے دخل کریراجہ وراثت اور دیگر نے کہا کہ تمام مسلم ممالک برمی حکومت سے سفارتی اور اقتصادی تعلقات کے بائیکاٹ کا اعلان کریں، برمی مسلمانوں کی نسل کشی قابل مذمت ہے اجلاس کے آخر میں برما میں شہید ہونے والوں کے ایصال ثواب کیلئے دعا کی گئی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -