میئر کراچی کے خلاف کرپشن الزامات کی تحقیقات کرائی جائیں،وسیم آفتاب

میئر کراچی کے خلاف کرپشن الزامات کی تحقیقات کرائی جائیں،وسیم آفتاب

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاک سر زمین پارٹی کے وائس چیئرمین وسیم آفتاب نے کہاہے کہ میئر کراچی کے خلاف کرپشن کے حوالے سے فاروق ستار تحقیقات کروائیں اربوں روپے کے فنڈز کہاں گئے جو بلدیاتی مسائل میں گہرے ہوئے شہر کراچی میں استعمال نہیں ہوسکے،بارشوں اور ہاکس بے کے سانحے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے اہل خانہ کو معاوضہ ادا کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے منگل کو پاکستان ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر ان کے ہمراہ حفیظ الدین،اورافتخار عالم بھی موجودتھے۔ وسیم آفتاب نے کہ کراچی شہر جو وفاق کو 70 فیصد ریونیو دیتا ہے وزیر ا عظم پاکستان شاہد خاقان عباسی نے کراچی میں حالیہ بارشوں میں 40سے زیادہ افراد کی ہلاکتوں پر افسوس تک کا اظہار نہیں کیااور نہ ہی لواحقین کے لئے جانی و مالی نقصان کے ازالے کا اعلان کیا ہم وفاقی و صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ بارشوں اور ہاکس بے سانحے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے اہل خانہ کو معاوضہ ادا کیا جائے شاہد خاقان عباسی صرف جاتی امراء کے نہیں پورے پاکستان کے وزیر اعظم ہیں، جب کراچی کے ووٹوں کی ضرورت پڑی تو صرف 25ارب روپے کے کراچی پیکیج کا اعلان کردیا گیا اور وہ بھی جھوٹے وعدے ثابت ہوئے،سندھ حکومت نے کراچی کے لئے 10ارب روپے کے فنڈ کا اعلان کیا تھاجو کہ شہر کی تباہ حال صورتحال کے باوجوداب تک جاری نہیں کیا گیا۔ انھو ں نے کہا کہ پاک سر زمین پارٹی کی اعلی قیادت نے پہلے ہی اس بات کی نشاندھی کردی تھی کہ میئر کراچی کمیشن وصول کر رہے ہیں لیکن ڈاکٹر فاروق ستار نے میئر کراچی کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیاجبکہ وہ آج میئر سے اربوں روپے کے فنڈز کا حساب مانگ رہے ہیں۔اب ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کو چاہئے کہ وہ میئر کراچی وسیم اختر کے خلاف کرپشن کی تحقیقات کروائیں اور کرپشن ثابت ہونے پر انھیں میئر کے عہدے سے ہٹایا جائے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -