کوہاٹ میں موٹر سائیکل چور گروہ کا ماسٹر مائنٹ ساتھی سمیت گرفتار

کوہاٹ میں موٹر سائیکل چور گروہ کا ماسٹر مائنٹ ساتھی سمیت گرفتار

  

کوہاٹ(بیورورپورٹ) کوہاٹ میں سرگرم موٹر سائیکل چور گروہ کا ماسٹر مائنڈسرغنہ ساتھی سمیت گرفتار کرلیا گیا۔زیر حراست ملزمان کے قبضے سے ناجائز اسلحہ اور مسروقہ موٹر سائیکلیں بھی برآمد کرلی گئیں۔ملزمان نے موٹر سائیکل چوری کی متعدد وارداتوں کا اعتراف جرم کرلیا ہے۔ ملزمان موٹر سائیکل چوری کرنے کے بعدفروخت کیلئے علاقہ غیر اورکزئی ایجنسی یا دیگر شہروں کو منتقل کرتے تھے۔پولیس ذرائع کے مطابق گزشتہ روز ایس ایچ اوتھانہ سٹی فیاض خان نے مخبر کی اطلاع پر فوری کاروائی کرتے پولیس نفری کے ہمراہ شہر کے علاقہ محلہ سکندر خان شہید میں اچانک چھاپہ مارا جہاں گھر کے سامنے سے موٹر سائیکل چور ی کرتے ہوئے ایک بائیک لفٹر عدنان ساکن سٹی کورنگے ہاتھوں گرفتار کرلیا گیا ۔پولیس نے مسروقہ موٹر سائیکل سمیت گرفتار ملزم کو فوری طور پر تھانہ سٹی منتقل کردیا جہاں اسکی نشاندہی پر پولیس نے ایک اور کامیاب کاروائی کرتے ہوئے کوہاٹ ہنگو روڈ کے علاقہ نصرت خیل میں واقع ایک گھر پر چھاپہ مارا جہاں سے پولیس نے چوری کی ایک اور موٹر سائیکل برآمد کرکے بائیک لفٹر گینگ کے سرغنہ شاہ فیصل کو حراست میں لے لیااور اسکے قبضے سے ایک کلاشنکوف،ایک پستول اور سینکڑوں کارتوس برآمد کرلئے۔موٹر سائیکلیں چوری کرنے کی وارداتوں میں ملوث دونوں گرفتار ملزمان کے خلاف تھانہ سٹی میں مقدمہ درج کرلیا گیاجبکہ ناجائز اسلحہ رکھنے کے جرم میں درج ایک اور مقدمے میں بھی ماسٹر مائنڈ ملزم شاہ فیصل کو نامزد کیا گیا ہے۔ پولیس نے ابتدائی پوچھ گچھ کے دوران زیر حراست ملزمان سے چوری کی متعدد وارداتوں کے راز اگلوادئیے ۔پولیس کے مطابق بائیک لفٹر گروہ کا سرغنہ شاہ فیصل قبل ازیں بھی موٹر سائیکل چوری کے جرم میں مسروقہ موٹر سائیکلوں سمیت گرفتار ہوکر جیل کی سزا کاٹ چکا ہے۔ پولیس ذرائع کے بقول گرفتار ملزمان نے دوران تفتیش انکشاف کیا ہے کہ وہ شہر کے مختلف علاقوں سے موٹر سائیکلیں چوری کرکے باڈی پارٹس اور کل پرزے تبدیل کرنے کے بعد مسروقہ موٹر سائیکلیں فروخت کیلئے علاقہ غیر اورکزئی ایجنسی یا دیگر شہروں کو منتقل کرتے جہاں چوری کی یہ موٹر سائیکلیں اونے پونے داموں فروخت کئے جاتے تھے اور اسطرح ملزمان موٹر سائیکلیں چوری کرنے کے سماجی و اخلاقی برائی کے اس دھندے کے ذریعے ناجائز کمائی میں مصروف عمل تھے۔ پولیس نے زیر حراست دونوں ملزمان کو بعد ازاں مقامی عدالت کے سامنے پیش کرتے ہوئے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -