پی سی بی تو ورلڈ الیون پر 25 کروڑ خرچ رہا ہے مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ آئی سی سی آزادی کپ کتنے پیسے لگا رہی ہے؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

پی سی بی تو ورلڈ الیون پر 25 کروڑ خرچ رہا ہے مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ آئی سی سی ...
پی سی بی تو ورلڈ الیون پر 25 کروڑ خرچ رہا ہے مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ آئی سی سی آزادی کپ کتنے پیسے لگا رہی ہے؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ پر پابندی کے باعث ہونے والے نقصانات کا ازالہ پورا کرنے کے وعدہ کا پاس رکھا ہے اور لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں ہونے والے آزادی کپ پر 12 لاکھ ڈالرز (تقریباً 12 کروڑ 64 لاکھ62 ہزار پاکستانی روپے) خرچ کر رہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔شاہین آج پھر ورلڈ الیون سے ٹکرائیں گے،پاکستان کو سیزیر میں0-1کی برتری حاصل

اس معاملے سے باخبر معتبر ذرائع نے نجی خبر رساں ادارے کو بتایا ہے کہ آئی سی سی اس سیریز پر 12 لاکھ ڈالرز (تقریباً 12 کروڑ 64 لاکھ62 ہزار پاکستانی روپے) خرچ کر رہی ہے اور ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ یہ رقم بین الاقوامی شہرت رکھنے والی ان سیکیورٹی کمپنیوں کو ادا کی جائے گی جن کی خدمات پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی جانب سے حاصل کی گئی ہیں۔

ذرائع نے یہ تصدیق بھی کی ہے کہ یہ مدد ستمبر 2016ءمیں منعقدہ آئی سی سی کی میٹنگ میں طے شدہ پروام کے تحت کی جا رہی ہے جب پی سی بی کی درخواست پر کرکٹ کے ”عشق“ میں مبتلا ملک کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

ذرائع نے بتایا کہ ”پی سی بی نے ملک میں بین الاقوامی کرکٹ پر پابندی کے باعث ہونے والے مالی نقصان کے ازالے کیلئے خصوصی امداد فنڈ دینے کی درخواست کی تھی۔ فنانشل کمرشل افیئرز کمیٹی کی سفارشات پر آئی سی سی بورڈ نے امدادی فنڈ دینے پر رضامندی ظاہر کی اور کہا کہ وہ پی سی بی سے اس معاملے پر مزید بات چیت کریں گے۔“

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس کے بعد ”آئی سی سی نے پی سی بی کو تجویز دی کہ وہ ورلڈ الیون سیریز کیلئے بین الاقوامی شہرت یافتہ سیکیورٹی ماہرین کی خدمات حاصل کرے جن کے اخراجات آئی سی سی برداشت کرے گی۔“

یہ بھی پڑھیں۔۔۔شیخ رشید کے ہاتھ میں موجود یہ لیڈیز پرس کس کا ہے؟شیخ رشید نے خود ہی راز سے پردہ اٹھادیا، ایسی بات کہہ دی کہ پورا پاکستان ہکا بکا رہ گیا

جن سیکیورٹی کمپنیوں کی خدمات حاصل کی گئی ہیں وہ پہلے بھی پی سی بی کے ساتھ کام کر چکی ہیں اور اس کے علاوہ دنیا کے کئی کرکٹ بورڈز کیساتھ بھی کام کرتی ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ان سیکیورٹی کمپنیوں کی موجودگی سے بین الاقوامی کھلاڑیوں کو پاکستان میں تاریخی سیریز کھیلنے پر رضامند کرنے میں بہت مدد ملی ہے۔

مزید :

کھیل -