بھارت،نظام دکن کے قیمتی طلائی ٹفن چوری کرنے والے دوچورگرفتار

بھارت،نظام دکن کے قیمتی طلائی ٹفن چوری کرنے والے دوچورگرفتار

نئی دہلی (این این آئی)بھارت میں پولیس نے کہاہے کہ سابق حکمران نظام دکن کے ہیرا جڑے طلائی ٹفن کو چرانے والے چور اس ٹفن کو اپنے کھانے کے لیے استعمال کر رہے تھے۔واضح رہے کہ پولیس نے گذشتہ ہفتے چوری ہونے والے اس طلائی ٹفن کو برآمد کر لیا ہے۔ پولیس نے چوروں سے یاقوت اور سونے کی بنی ایک چائے کی پیالی، طشتری اور چمچہ بھی برآمد کیا ہے۔پولیس نے بھارت کے جنوبی شہر حیدر آباد سے تعلق رکھنے والے ان دو چوروں کو گرفتار کر لیا ہے۔بھارتی ٹی وی کے مطابق تین کلو وزنی ان اشیا کی قیمت تقریباً 70 لاکھ ڈالر بتائی جا رہی ہے۔ یہ اشیا آخری نظام بادشاہ میر قاسم علی خان کی ملکیت تھیں۔

ایک زمانے میں وہ دنیا کے امیر ترین شخص تھے۔واضح رہے کہ اسی خاندان سے تعلق رکھنے والی ایک تلوار ایک اور میوزیم سے دس سال قبل چوری ہو گئی تھی۔پولیس نے الزام عائد کیا کہ دونوں افراد چوری شدہ سامان کے خریدار کو تلاش کرنے کی امید پر مغربی شہر ممبئی بھاگ گئے تھے جہاں وہ چند دنوں سے ایک فائیو سٹار ہوٹل میں ’تصوراتی زندگی‘ گزار رہے تھے۔ممبئی میں چوری والے سامان کا خریدار نہ ملنے کے بعد وہ واپس حیدر آباد آ گئے جہاں انھیں ایک بڑی تلاش کے بعد گرفتار کر لیا گیا۔پولیس کو ابتدائی طور پر انھیں پہنچانے میں مشکل کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ انھوں نے نظام دکن کے محل میں لگے تمام 32 سی سی ٹی وی کیمروں کو بند کر دیا تھا تاہم وہ محل کے قریب لگے ہوئے ایک دوسرے کیمرے کی زد میں آ گئے جہاں وہ ایک موٹر سائیکل پر بیٹھے ہوئے تھے۔

مزید : علاقائی