ٹل میں محکمہ فوڈ کی دودھ فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن، 6گرفتار

ٹل میں محکمہ فوڈ کی دودھ فروشوں کیخلاف کریک ڈاؤن، 6گرفتار

ہنگو۔(بیورورپورٹ) تحصیل ٹل میں محکمہ فوڈ کا غیر معیاری دودھ فروشوں کے خلاف کریک ڈاون۔دودھ میں مضر صحت اجزاء فرمالین کیمیکل اور پانی کی زائد مقدار پاکر موجودگی کی تصدیق پر 6 دودھ فروش سمیت ایک نا نبائی گرفتار کر کے 10دن کے لئے جیل بھیج دیا گیا 150 لیٹر دودھ کو تلف کر دیا گیا۔ اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر شاہد علی خان دورہ تحصیل ٹل کے موقع پر میڈیا سے بات چیت تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر فوڈ سعادت حسن خیبر پختونخواہ کی خصوصی ہدایات پر جاری مہم کے دوران ڈپٹی کمشنر شاہ فہد کی سر پرستی میں ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر صلاح الدین کے زیر نگران اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر شاہد علی خان نے محکمہ لائیو سٹاک لیبارٹر ی عملہ کے ہمراہ اچانک تحصیل ٹل کے مختلف بازاروں پر چھاپے لگائے چھاپوں کے دوران 6 دودھ فروش کومضر صحت دودھ کی فروخت کر نے پر دھر لیا گیا چھاپے محکمہ لائیو سٹاک کے عملہ نے موقع پر دودھ فروشوں سے غیر قانونی تیار کردہ دودھ کے نمونے حاصل کر کے ملک ٹیسٹنگ لیبارٹری میں انسانی صحت کے لئے مضر صحت اجزاء فارمالین کیمیکل کی موجودگی کی تصدیق پر اور پانی زائد مقدار پاکر 6 دودھ فروشوں کو حراست میں لیکر فوڈ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کر کے 10دن کے لئے سرکاری مہمان خانے میں بند کر د ئیے گئے ۔صحافیوں سے بات چیت میں اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر شاہد علی خان نے کہاکہ فوڈ ایکٹ کے واضع کردہ قوانین پر عمل درآمد کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ دوکانداران حکومتی قوانین اور فوڈ ایکٹ کی مکمل پاسداری کرتے ہوئے اپنا بھر پور تعاون پیش کریں۔انہوں نے کہاکہ ہر گز کسی کو انسانی صحت کیساتھ کھیلنے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر