بچوں کی حوالگی کا کیس، ایک بچہ ماں اور 2باپ کے حوالے

بچوں کی حوالگی کا کیس، ایک بچہ ماں اور 2باپ کے حوالے

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے تین بچوں کی حوالگی کیس میں ایک بچہ ماں اور دو بچے باپ کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا ہے ،فاضل جج نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ اگر تینوں بچوں کو ایک چھت کے نیچے رکھنا ہے تو آپس میں سمجھوتہ کرلیں۔بچوں کی ماں نائیلہ بی بی نے خاوند محمد سلیم سے بچے بازیاب کرانے کے لئے سیشن عدالت میں درخواست دائر کررکھی تھی ،عدالت کے حکم پر پولیس نے 8 سالہ حماد حسین، 6 سالہ مبین اور 4 سالہ حیدر علی کو عدالت میں پیش کیا ،بچوں کا والد بھی بچوں کے ساتھ عدالت میں پیش ہوا ،عدالت نے بچوں سے ان کی خواہش معلوم کی بچوں نے ماں اور والد دنوں کے ساتھ رہنے کی خواہش کا اظہار کیا جس پر فاضل جج نے میاں بیوی کو صلح کرنے کا موقع دیا ،بیوی نے صلح کرنے سے انکار کر دیا جس پر عدالت نے چھوٹا بچہ حیدر ماں کے حوالے جبکہ دو بڑے بچے والد کو سونپ دیئے ،عدالت نے میاں بیوی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا اپنے بچوں کو ایک چھت کے نیچے رکھنا چاہتے ہو تو آپس میں صلح کر لیں۔

،خاندان کو تقسیم اور تباہی سے بچائیں،یہ عارضی فیصلہ ہے آپ دونوں کے پاس سمجھوتہ کرنے کے لئے وقت ہے ۔

مزید : علاقائی