خیبر ،بارشیں نہ ہونے سے زیر زمین پانی کی سطح کم

خیبر ،بارشیں نہ ہونے سے زیر زمین پانی کی سطح کم

خیبر (بیورورپورٹ)لنڈیکوتل میں پانی کی سطح انتہائی نیچے گر گئی بارشیں کم ہونے کیو جہ سے پانی کی سطح کم ہو گئی ہے کئی جہگوں پر بارانی ڈیمز بنائے گئے لیکن علاقے کوئی فائدہ نہیں پہنچ سکا غلط سائیڈ سلیکشن اور ناقص میٹریل استعمال سے بارانی ڈیمز سے علاقے کے عوام مستفید نہیں ہو رہے ہیں ،ضلع خیبر کے تحصیل لنڈیکوتل میں پانی کی سطح انتہائی نیچے گر گئی ہیں بارشیں کم ہونے کی وجہ سے ٹیوب ویلز میں بھی پانی کی سطح کم ہو تی جا رہی ہیں پبلک ہیلتھ انجینئرز کے مطابق کہ پانی کی سطح 70فٹ سے 150فٹ تک نیچے گر گئی ہیں اگر بارشیں نہیں ہوئی تو پانی کی سطح مزید گر سکتی ہیں لنڈیکوتل میں چار پانچ جہگوں پر بارانی ڈیمز تعمیر کئے گئے ہیں لیکن غلط سائیڈ سلیکشن اور ناقص میٹریل استعمال کرنے کی وجہ سے علاقے کو کو ئی فائدہ نہیں پہنچ سکا لنڈیکوتل میں قدرتی طور پر ایسے سائیڈز ہیں جہاں پرکم خرچہ پر بارانی ڈیمز تعمیر کئے جا سکتے ہیں جس سے علاقے کے عوامکو بھر پور فائدہ پہنچ سکتا ہیں اس سلسلے میں پاکستا ن تحریک انصاف کے کارکنا ن عابد آفریدی اور عظمت علی شینواری نے کہا کہ حکومت بارانی ڈیمز تعمیر کر نے پر تو جہ دیں کیونکہ آنے والے وقت میں پینے کی صاف پانی کی شدید قلت پیدا ہو سکتی ہیں انہوں نے کہا کہ بارشوں کے دوران بہت زیا دہ پانی ضائع ہو تی ہیں بہت سے ایسے علاقے ہیں جہاں پر بارانی ڈیمز کم لاگت اور آسانی سے تعمیر کئے جا سکتے ہیں قدرتی طور پر وہ ڈیمز کیلئے موزوں جہگے ہیں جہاں سے بارشوں کے دوران پہاڑوں سے پانی نکلتے ہیں لیکن سار ا پانی ضائع ہو تی ہیں انہوں نے کہا کہ بعض علاقوں میں پانی کے چشمے موجود ہیں لیکن اس طرف بھی کسی نے توجہ نہیں دی اور نہ اس پر کام کیا گیا ہے اگر اس پر کام کیا گیا تو ہزاروں عوام کو فائد ہ پہنچ سکتا ہیں عابد آفرید ی اور عظمت علی شینواری نے حکومت سے مطالبہ کیا بارانی ڈیمز تعمیر کرنے کیلئے سنجیدگی سے اقدامات کریں تاکہ یہاں کے عوام آنے والے وقت میں پانی کی قلت سے بچ سکے

مزید : کراچی صفحہ اول