وہاڑی : انتظامیہ کی لاپرواہی ،واٹر فلٹریشن پلانٹس بند

وہاڑی : انتظامیہ کی لاپرواہی ،واٹر فلٹریشن پلانٹس بند

وہاڑی(بیورو رپورٹ+نا مہ نگار)ضلعی انتظامیہ کی غفلت اورنااہلی کی وجہ سے لاکھوں روپے کی لاگت سے لگائے گئے پینے کے صاف پانی کے فلٹریشن پلانٹ کئی ماہ سے خراب ہوکربندہوچکے ہیں شہری پینے کے صاف پانی کوترس گئے،لیگی حکومت کے خاتمہ کے بعد بھی عوام کی مشکلات میں کمی واقع نہ ہوسکی وہاڑی کے شہری بنیادی ضرورت پینے کے صاف پانی کی قلت کاشکار۔متعددفلٹریشن پلانٹس خراب ہوکربندہوچکے ہیں جبکہ ڈپٹی کمشنرسمیت کوئی (بقیہ نمبر52صفحہ7پر )

بھی پرسان حال نہیں ہے ڈپٹی کمشنرہاؤس کے دونوں اطراف فلٹریشن پلانٹس بھی ناکارہ ہوچکے ہیں بندفلٹریشن پلانٹس سے منشیات کے عادی افرادٹونٹیاں اتارکرلے گئے ہیں شہرمیں چندایک پلانٹس چل رہے ہیں جن پررش کی وجہ سے پانی کاحصول مشکل ترین ہوجاتاہے انتظامیہ وہاڑی کی عوام کو پینے کے صاف پانی فراہمی میں مکمل ناکام ہوچکا ہے جس کی وجہ سے وہاڑی کے شہری زیرزمین مضرصحت پانی پینے پرمجبورہیں شہرکے جن علاقوں کے فلٹریشن پلانٹس ناکارہ ہوچکے ہیں ان میں کالج ٹاؤن،دانیوال ٹاؤن،آفیسرزکالونی،چاندنی پارک،شرقی کالونی اورگورنمنٹ بوائزکالج شامل ہیں جس سے نہ صرف ملک وقوم کے لاکھوں روپے انتظامیہ کی غفلت کی نذرہوچکے ہیں بلکہ شہری پینے کے صاف پانی سے محروم ہوکر زیرزمین مضرصحت پانی استعمال کرکے خطرناک بیماریوں کاشکارہورہے ہیں شہریوں کاکہناہیکہ ضلعی حکومت عوام کوبنیادی سہولیات فراہم کرنے میں اب تک ناکام جارہی ہے شہری پینے پانی کے حصول کیلئے ایک فلٹریشن پلانٹ سے دوسرے فلٹریشن پلانٹ کی طرف مارے مارے پھرتے دکھائی دیتے ہیں شہریوں کایہ بھی کہناہے کہ پورے ضلع وہاڑی کازیرزمین پانی خطرناک حدتک مضرصحت ہے جس کی وجہ سے کینسر،پھیپھڑوں،گردوں،جگرودیگرخطرناک بیماریوں میں مبتلامریضوں میں اضافہ دیکھنے میں آرہاہے۔

فلٹریشن پلانٹس ناکارہ

مزید : ملتان صفحہ آخر