وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس، 9 نکاتی ایجنڈے پر غور

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس، 9 نکاتی ایجنڈے پر غور
وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس، 9 نکاتی ایجنڈے پر غور

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی کابینہ نے بیرون ملک سرمایہ اور اثاثہ جات کی واپسی کے لیے ریکوری یونٹ کےقیام کی منظوری دے دی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں 9 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا،وفاقی کابینہ نے کیڈ ڈویژن کو ختم کرنے کی منظوری دےدی جب کہ وفاق میں صحت سےمتعلقہ امور وزارت نیشنل ہیلتھ سروسزکےماتحت کرنے اور ملکی اداروں میں ریگولیٹری نظام کی کارگردگی بڑھانے کے لیے ٹاسک فورس قائم کرنے کی بھی منظوری دے دی گئی، کابینہ نے اورنج ٹرین سمیت گزشتہ حکومت کےتمام ماس ٹرانزٹ منصوبوں کا خصوصی آڈٹ کرانےکی منظوری دی ہے جس کے تحت راول پنڈی، لاہور، ملتان اور پشاور میٹرو بس منصوبوں کا عالمی معیارکی آڈٹ فرم سے خصوصی آڈٹ کرایا جائےگا۔

کابینہ نے بیرون ملک سرمایہ اور اثاثہ جات کی واپسی کے لیے ریکوری یونٹ کےقیام کی بھی منظوری دے دی، ریکوری یونٹ احتساب کے حوالے سے ٹاسک فورس کی معاونت کرے گا، کابینہ نے پاکستان نیوی ایکٹ 1961ء میں ترمیم اور سپریم کورٹ کے فیصلےکی روشنی میں انکم ٹیکس ترمیمی آرڈنینس میں ترمیم کی بھی منظوری دے دی ہے۔

مزید : قومی /ڈیلی بائیٹس /سیاست /علاقائی /اسلام آباد