وفاقی حکومت نے سابقہ حکومت کے میگا پراجیکٹ کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ،شریف خاندان کے لیے ایک اور مشکل کھڑی ہو گئی

وفاقی حکومت نے سابقہ حکومت کے میگا پراجیکٹ کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ،شریف ...
وفاقی حکومت نے سابقہ حکومت کے میگا پراجیکٹ کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ،شریف خاندان کے لیے ایک اور مشکل کھڑی ہو گئی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )حکومت نے تنخواہ دار طبقے پر ٹیکس شرح میں ردو بدل نہ کرنے اور میٹروپرجیکٹس کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا ۔وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں ہونے والے اہم فیصلوں سے متعلق میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیراطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ابھی تنخواہ دار طبقے کی ٹیکس شرح میں ردو بدل کا فیصلہ نہیں کیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ میٹروپروجیکٹس پرآنےوالی لاگت کی تحقیقات کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔3میٹروپروجیکٹس پر8 ارب روپے سبسڈی کی مدمیں خرچ ہوتے ہیں جبکہ اسلام آبادمیٹرو پر4اشاریہ 2 ارب روپے کی سبسڈی حکومت دیتی ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت ان میٹرو پروجیکٹس پر سبسڈی دینے سے انکارکردتے یہ پروجیکٹ آج ہی بند ہوجائیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ پشاور میٹروپروجیکٹ 67 ارب روپے میں مکمل ہوگا،پروجیکٹ پر حکومت کوئی سبسڈی نہیں دے گی،لاہورمیٹرو کی بسیں کرائے پرہیں جبکہ پشاورمیٹرو کی بسیں اپنی ہیں، ملتان میٹرو کا مکمل کرایہ 5کروڑ روپے ہے اور مکمل سبسڈی 2اشاریہ 1ارب روپے ہےتاہم حکومت پنجاب کوتینوں میٹروز پر 8ارب روپے خرچ کرنا پڑتاہے۔فواد چوہدری نے مزید کہا کہ اورنج لائن ٹرین پروجیکٹ 250ارب روپے تک پہنچ چکا ،اس خرچے میں خیبر سے کراچی کا ریلوے ٹریک ڈبل ہوسکتا تھاجبکہ پروجیکٹ کیلئے حکومت کو ساڑھے 3ارب روپے سبسڈی دینی پڑیگی تاہم پشاور کے منصوبے میں حکومت کو سبسڈی نہیں دینی پڑ رہی اور یہ تین شہروں کے پبلک پروجیکٹس ناقص بنائے گئے۔

وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ وزارت کیڈ کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کی منظوری کابینہ نے دے دی ہے جب کہ سی ڈی اے کو وزارت داخلہ کے ماتحت کردیا گیا ہے، سی ڈی اے نے چند دنوں میں ہزاروں کینال زمین واگزار کرائی ہے اب سی ڈی اے کے آپریشن کو جاری رکھا جائے گا، 34 ہزار 60 کینال زمین کی نشاندہی ہوئی جسے کمرشل استعمال میں لایا جائے گا۔فواد چوہدری کا مزید کہنا تھا کہ اجلاس میں پی ٹی وی کے بورڈ آف گورنرز کی منظوری دی گئی ہے جب کہ ہارون شریف کو چیئرمین بورڈ آف انویسٹمنٹ بنایا گیا ہے۔

مزید : قومی