کیا شیخ رشید کو واقعی ان کی والدہ کے جنازے میں شرکت کی اجازت نہیں ملی تھی اور انہیں گرفتار کروانے والے شخص کا وزیر اطلاعات فواد چوہدری کیساتھ کیا تعلق ہے؟ معروف سینئر صحافی نصرت جاوید نے سچ سے پردہ اٹھایا تو ہر پاکستانی ہکا بکا رہ گیا

کیا شیخ رشید کو واقعی ان کی والدہ کے جنازے میں شرکت کی اجازت نہیں ملی تھی اور ...
کیا شیخ رشید کو واقعی ان کی والدہ کے جنازے میں شرکت کی اجازت نہیں ملی تھی اور انہیں گرفتار کروانے والے شخص کا وزیر اطلاعات فواد چوہدری کیساتھ کیا تعلق ہے؟ معروف سینئر صحافی نصرت جاوید نے سچ سے پردہ اٹھایا تو ہر پاکستانی ہکا بکا رہ گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ لندن میں ادا کرنے کے بعد ان کی میت لاہور روانگی کیلئے ہیتھرو ائیرپورٹ منتقل کی جا چکی ہے جو کل صبح لاہور پہنچے گی۔

بیگم کلثوم نواز کے انتقال کی خبر آئی تو نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی پیرول پر رہائی کی باتیں شروع ہو گئیں اور اس کیساتھ ہی سوشل میڈیا پر ایک اور مہم بھی چل نکلی کہ نواز شریف نے شیخ رشید کو گرفتار کروایا تھا اور ان کی والدہ انتقال کر گئیں تو انہیں نماز جنازہ میں بھی شریک نہیں ہونے دیا گیا تھا۔

معروف سینئر صحافی نصرت جاوید نے اس حوالے سے حقیقت سے پردہ اٹھاتے ہوئے بتایا ہے کہ شیخ رشید کو نواز شریف کی حکومت میں نہیں بلکہ بینظیر کی حکومت میں جیل میں ڈالا گیا تھا جبکہ ان کی والدہ کا انتقال بھی اس وقت نہیں ہوا تھا جب وہ جیل میں تھے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے نصرت جاوید نے کہا کہ شیخ رشید کو بینظیر کی حکومت میں گرفتار کیا گیا اور انہیں گرفتار کروانے والے چوہدری الطاف حسین تھے جو وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کے تایا تھے جبکہ انہیں گرفتار کرنے والے شعیب سڈل تھے۔

نصرت جاوید نے مزید کہا کہ شیخ رشید اگر آپ کیساتھ زیادتی ہوئی ہے تو آپ کو اتنی شرم نہیں آتی کہ شعیب سڈل کیخلاف کارروائی ہی کروا لیں، چاہے آپ اپنے ’وزیر بھائی‘ فواد چوہدری کیخلاف کچھ مت بولیں مگر شعیب سڈل کیخلاف کارروائی تو کروا سکتے ہیں جبکہ ایک اور بات یہ بھی ہے کہ شیخ رشید کی والدہ کا انتقال اس وقت نہیں ہوا تھا جب وہ جیل میں تھے۔

۔۔۔ویڈیو دیکھیں۔۔۔

مزید : قومی /ڈیلی بائیٹس /علاقائی /اسلام آباد /پنجاب /لاہور