’’جنوبی پنجاب کے صوبہ بننے سے قبل ہی پنجاب کو تین حصوں میں تقسیم کر دیا گیا، یہ کام حکومت نہیں ۔۔۔‘‘حیران کن خبر آگئی 

’’جنوبی پنجاب کے صوبہ بننے سے قبل ہی پنجاب کو تین حصوں میں تقسیم کر دیا ...
’’جنوبی پنجاب کے صوبہ بننے سے قبل ہی پنجاب کو تین حصوں میں تقسیم کر دیا گیا، یہ کام حکومت نہیں ۔۔۔‘‘حیران کن خبر آگئی 

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے مرکزی شوریٰ اور پنجاب کی صوبائی شوریٰ سے مشاورت کے بعد پنجاب کو تین انتظامی صوبوں وسطی ، شمالی اور جنوبی پنجاب میں تقسیم کردیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف نے امیر جماعت اسلامی کی جانب سے پنجاب کو تین انتظامی صوبوں میں تقسیم کرنے کی تفصیلات سے میڈیا کو  آگاہ کرتے  ہوئے کہا  کہ دستور جماعت اسلامی کی دفعہ 38(1) کے مطابق صوبے کو تین انتظامی یونٹس میں تقسیم کیا گیاہے ۔ وسطی پنجاب میں لاہور ، گوجرانوالہ ، فیصل آباد اور ساہیوال ڈویژن کے اضلاع شامل ہوں گے ۔ گوجرانوالہ ڈویژن کے دو اضلاع گجرات اور منڈی بہاؤالدین شمالی پنجاب میں شامل کیے گئے ہیں ۔ صوبہ شمالی پنجاب میں راولپنڈی ، سرگودھا ڈویژن ، نیز ضلع اسلام آباد جبکہ صوبہ جنوبی پنجاب میں ملتان ، بہاولپور اور ڈیرہ غازیخان ڈویژن کے تمام اضلاع شامل ہیں ۔قیصر شریف کا کہنا تھا کہ تینوں یونٹس کی صوبائی شوریٰ کے ارکان کے اجلاس طلب کر لیے گئے ہیں، جنوبی پنجاب کی شوریٰ کا اجلاس 15 ستمبر کو ملتان، وسطی پنجاب کا17 ستمبر کو منصورہ اورشمالی پنجاب کی شوریٰ کا اجلاس 19 ستمبر کو اسلام آباد میں ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ پنجاب کی صوبائی شوریٰ کے اراکین اب اپنے متعلقہ صوبوں کی شوراؤں کے ارکان ہوں گے جبکہ صوبائی امراء کے استصواب کے لیے صوبائی شوریٰ کے اجلاسوں میں مشاورت کی جائے گی ۔

مزید : قومی