سندھ اسمبلی میں نامزد قائد حزب اختلاف اور تحریک انصاف کے رہنما فردوس نقوی نے پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت پر بجلیاں گرا دیں

سندھ اسمبلی میں نامزد قائد حزب اختلاف اور تحریک انصاف کے رہنما فردوس نقوی ...
سندھ اسمبلی میں نامزد قائد حزب اختلاف اور تحریک انصاف کے رہنما فردوس نقوی نے پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت پر بجلیاں گرا دیں

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدر و نامزد قائد حزب اختلاف سندھ اسمبلی فردوس شمیم نقوی نے کہا ہے کہ سندھ حکومت کی لاعلمی سمجھ سے باہر ہے،عوام کے مال کو مال مفت سمجھنے والے آسانی سے پیسہ ہڑپ کر لیتے ہیں اور کچھ پتہ نہیں چلتا، 6 سو گاڑیاں اربوں روپے سے آئیں لیکن کہاں گئیں کچھ پتہ نہیں چلا؟یہ کسی جاسوسی فلم کا سکرپٹ تو ہوسکتا ہے لیکن حقیقت نہیں ہوسکتی،مذکورہ گاڑیاں سرکاری خزانے سے خریدی گئیں اور پروٹوکول عملے کے حوالے کی گئیں،پروٹوکول کے عملے نے یہ گاڑیاں من پسند افراد کے حوالے کس کے حکم سے کیں؟ یہ پتہ چلایا جائے۔

تفصیلات کے مطابق رکن سندھ اسمبلی فردوس شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ قومی خزانے سے خریدی گئی 6 سو گاڑیوں کیسے اور کس کے کہنے پر غائب کی گئیں؟ اس بات کا کوئی تحریری ریکارڈ کیوں نہیں ہے؟ اس سے بھی بدنیتی ظاہر ہوتی ہے،قانون نافذ کرنے والے ادارے نیب اور اینٹی کرپشن چھ سو گاڑیوں کا سراغ لگا سکتے ہیں،اس کے لیے صرف سندھ حکومت کا تعاون درکار ہوگا، یہ برسوں پہلے غائب ہونے والی گاڑیاں آج تک معمہ کیوں بنی ہوئی ہیں؟ اس بات کا پتہ چلایا جائے۔فردوس شمیم نقوی کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف عوام کے پیسوں کو لوٹ کا مال نہیں بننے دے گی، حکومت سندھ اس معاملے میں نیب اور اینٹی کرپشن سے تعاون کرے، قانون نافذ کرنے والے ادارے اپنا کام دیانتداری سے انجام دیں تاکہ عوام کا پیسہ واپس لایا جاسکے اور عوام کی فلاح و بہبود میں خرچ ہو۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی