گورنر راج یا ایمر جنسی لگا کر کسی صوبے کے آئینی و جمہوری حقوق پر حملہ نہیں کرنا چاہتے: فردو س عاشق

گورنر راج یا ایمر جنسی لگا کر کسی صوبے کے آئینی و جمہوری حقوق پر حملہ نہیں ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ حکومت نے کہیں بھی نہ گورنر راج کی بات کی ہے نہ ایمرجنسی لگا کر کسی صوبے کے آئینی و جمہوری حقوق پر حملہ کرنا چاہتی ہے،آرٹیکل149 کے حوالے سے وزیر قانون کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے،بیڈ گورننس کے خمیازہ کراچی کے عوام بھگت رہے ہیں،سندھ حکومت کسی طرح بھی تعاون کرنے کیلئے تیار نہیں،صوبائی حکومت ہوش کے ناخن لے،چیف الیکشن کمشنر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے سے متعلق ابھی حکومتی سطح پر کوئی فیصلہ نہیں ہوا۔ پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ پاکستان بھر کے جمہوری سوچ اور جمہوریت پر یقین رکھنے والے عوام کو مبارکباددیتی ہوں کہ پارلیمنٹ نے جمہوری کیلنڈر کا ایک سال مکمل کرلیا ہے،پارلیمنٹ اب فنکشنل ہے اور کلیدی کردار اداکررہی ہے،یہ درست سمت میں ایک مثبت پیش رفت ہے۔انہوں نے کہا کہ پوری قوم یکجا ہو کر مظفرآباد میں کشمیریوں کے ساتھ کھڑی نظر آئے گی،فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ جنھیں سیاسی پختگی کی ضرورت ہے وہ قوم کو تقسیم کررہے ہیں،کسی صوبے کو تقسیم کرنے کے حوالے غیرذمہ دارانہ بیان کی مذمت کرتی ہوں، جمہوریت کا لبادہ اوڑھ کر ذاتی مفادات کا تحفظ کرنے والوں نے اپنا اصل چہرہ بے نقاب کردیا ہے،آج قوم توقع کرتی ہے سندھ کے نام پر سیاست کرنے والے وہاں کے مسائل کے تدارک کیلئے لائحہ عمل سامنے لائیں گے۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ عوامی فلاح کیلئے سندھ حکومت وفاق کے ساتھ ملکر لائحہ عمل مرتب کرے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں خطاب ایک وے فارورڈ ہوگا۔

فردوس عاشق اعوان

مزید : صفحہ اول


loading...