"ماں، بیٹی، باپ، بھائی" موٹروے پر پورے خاندان کو لوٹ لیا گیا

"ماں، بیٹی، باپ، بھائی" موٹروے پر پورے خاندان کو لوٹ لیا گیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور اسلام آباد موٹروے پر وارداتوں میں اضافہ ہونے لگا۔ اسلام آباد سے لاہور آنے والی فیملی کو اسلحے کی نوک پر لوٹ لیا گیا۔

لاہور سے تعلق رکھنے والے امجد، ان کی اہلیہ زاہدہ بیگم، ان کے بیٹے حسین اور علی اور ایک بیٹی اپنی گاڑی میں اسلام آباد سے لاہور آرہے تھے۔ رات کو ڈیڑھ بجے کے قریب چناب پل پر ان کی گاڑی ہیٹ اپ ہوگئی، ایک بیٹے نے اتر کر گاڑی کا پانی چیک کرنا چاہا لیکن بونٹ کھولتے ہی سیاہ کرولا گاڑی میں ڈاکو آگئے اور اسلحے کی نوک پر پوری فیملی سے سارا قیمتی سامان چھین لیا۔ واردات میں ملوث گاڑی کا نمبر LE-2718 ہے اور اس کا رنگ سیاہ ہے۔ اتنی معلومات مہیا کرنے کے باوجود پولیس کی جانب سے ڈاکوؤں کا سراغ نہیں لگایا جاسکا۔

متاثرہ شخص امجد کے بیٹے علی نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ڈاکوؤں نے بے خوف واردات کی اور اتنی دیدہ دلیری دکھائی کہ واردات کرنے کے بعد فرار ہوئے اور پھر دوبارہ واپس آگئے اور ہم سے گاڑی کی چابی بھی چھین کر لے گئے۔ علی کے مطابق واردات کے 4 سے  5 منٹ کے بعد موٹروے کی پٹرولنگ پارٹی آئی اور کہا کہ ہمیں آپ کی کال موصول نہیں ہوئی ہم تو یہاں سے گزر رہے تھے تو آپ کو دیکھ کر رکے ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پولیس اہلکاروں نے بجائے اس گاڑی کا پیچھا کرنے کے ہمارے انٹرویو میں ٹائم ضائع کردیا، ہم انہیں بار بار کہتے رہے کہ آپ گاڑی کا پیچھا کریں لیکن انہوں نے ہمیں جھوٹی تسلی دی کہ ہم نے وائرلیس کردی ہے ، گاڑی موٹروے سے ایگزٹ نہیں ہوسکے گی ، جب ہم لاہور ٹول پلازہ پر پہنچے تو وہاں موجود اہلکاروں سے وائرلیس کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے کہا کہ ہمیں کوئی وائرلیس موصول نہیں ہوئی۔

صاحب خانہ امجد نے بتایا کہ انہوں نے متعلقہ تھانے میں واقعے کی ایف آئی آر درج کرائی لیکن پولیس نے مقدمہ ان کی مدعیت میں نہیں بلکہ اپنی ہی مدعیت میں درج کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -