کورونا وبا ہو یا کثیر جہتی فورم،پاکستان کی مدد تعاون اور حمایت جاری رہے گی:چین

کورونا وبا ہو یا کثیر جہتی فورم،پاکستان کی مدد تعاون اور حمایت جاری رہے ...

  

 بیجنگ (آئی این پی)چین نے نونگ رونگ کو پاکستان میں اپنا نیا سفیر مقرر کر دیا۔ ہفتہ کو چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ژا ؤلی جیان نے اس تعیناتی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ نونگ رونگ جلد ہی پاکستان میں بطور چینی سفیرمقررہ وقت پر عہدہ سنبھالیں گے۔ انہوں نے  گزشتہ روز ماسکو میں ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ ای کی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے ملاقات کے حوالے سے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ ماسکو میں پاک چین وزرائے خارجہ ملاقات میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ اس مرتبہ شنگھائی تعاون تنظیم کے وزرائے خارجہ کی ملاقات کے مثبت نتائج بر آمد ہوئے ہیں۔ اجلاس کے دوران بالخصوص یکطرفہ غنڈہ گردی کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کے پس منظر کے خلاف کثیر جہتی کو برقرار رکھنے، اقوام متحدہ کے اختیارات کا دفاع اور بین الاقوامی قانون کی آواز کو بلند کیا گیا۔ ماسکو اجلاس میں مشترکہ طور پر مختلف چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے شنگھائی تعاون تنظیم کی بین الاقوامی ذمہ داریوں کی تکمیل کی گئی۔ اجلاس کے دوران  چین کے اسٹیٹ کونسلر وانگ ای نے کہا کہ چین کوروناکے خلاف جنگ میں پاکستان کو مدد فراہم کرنے کیلئے تیار ہے جب تک کہ اس وبا کو شکست نہیں مل جاتی۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری کو بہتر بنانے کے لئے پاکستان کے ساتھ زرعی تعاون بھی شامل ہے۔ دونوں اطراف کی مشترکہ کاوشوں سے پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ پاکستان کی معاشی ترقی کو فروغ دینے اور پاکستانی عوام کی کی فلاح و بہبود میں اہم کردار ادا کرے گا۔ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ چین بین الاقوامی انصاف کے تحفظ کے لئے کثیرالجہتی مواقع پر پاکستان کی بھر پور حمایت جاری رکھے گا۔ آئندہ سال چین اور پاکستان کے مابین سفارتی تعلقات کے قیام کی 70ویں سالگرہ منائی جارہی ہے۔ ماسکو میں پاک چین وزرائے خارجہ ملاقات کے موقع پر شاہ محمود قریشی کی گفتگو کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین نے ہمیشہ ایک دوسرے پر اعتماد کیا ہے اور ایک دوسرے کاساتھ دیا ہے۔ پاکستان چین کے ساتھ مضبوطی سے کھڑا ہے اور چین کے خلاف کسی بھی قسم کی بدنامی اور بے بنیاد الزامات کی مخالفت کرتا رہے گا۔ پاکستان چین کے ساتھ سی پیک منصوبوں کی جلد تکمیل، غربت کے خاتمے میں تجربے کا اشتراک بڑھانے، زرعی تعاون کو آگے بڑھانے اور دونوں ممالک کے مابین موسمی حکمت عملی کی شراکت کو آگے بڑھانے کے لئے تیار ہے۔

چین 

مزید :

صفحہ اول -