لاہور میں ایک مبینہ ڈکیت رنگے ہاتھوں پکڑا گیا

لاہور میں ایک مبینہ ڈکیت رنگے ہاتھوں پکڑا گیا
لاہور میں ایک مبینہ ڈکیت رنگے ہاتھوں پکڑا گیا
کیپشن:    سورس:   creative commons license

  

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور کے علاقے جوہرٹاؤن میں ڈکیتی کی کوشش ناکام بنادی گئی۔شہری نے بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے مبینہ ڈاکوپکڑلیا۔

سٹی 42 کے مطابق ڈاکوڈکیتی واردات کررہاتھا کہ اسے موقع پرپکڑلیا۔اطلاع ملنے پر ڈولفن فورس موقع پرپہنچی ڈاکو کو حراست میں لے لیا۔ جوہرٹاﺅن کے علاقے میں ڈکیتی کے دوران شہری نے مبینہ ڈاکو کو دھر لیا،شہری زین کا کہناتھا کہ جوہر ڈی ٹو بلاک میں مسلح ڈاکو ڈکیتی کر رہا تھا،ملزم کو ڈکیتی کرتے ہوئے موقع سے پکڑا۔

شہری کا کہناتھا کہ ملزم نے مزاحمت کرنے کی کوشش کی،کال کرنے پر ڈولفن اور متعلقہ پولیس پہنچ گئی،بعدازاں ملزم کو پولیس سٹیشن منتقل کر دیا گیا،پولیس ذرائع کا کہنا تھا کہ معاملے کی تحقیقات جاری ہیں۔

واضح رہے کہ رواں سال کے پہلے ماہ جرائم پیشہ افراد کی تین سو سے زائد ریکارڈ وارداتیں، ماہ جنوری میں 28 افراد قتل اور چار افراد ڈکیتی مزاحمت پر ڈاکوو¿ں کی گولیوں کا نشانہ بنے جبکہ پولیس کی کارکردگی مایوس کن رہی۔لاہور کے باسیوں کے لئے سال دوہزار بیس کا آغاز کچھ اچھا نہ رہا۔

رواں سال کے پہلے ایک ماہ میں جرائم پیشہ افراد نے شہریوں کے جان و مال پر تابڑ توڑ حملے کئے۔ چوری اور ڈکیتی کی سب سے زیادہ وارداتیں صدر ڈویڑن میں رپورٹ ہوئیں۔ شہریوں سے نہ صرف راہ چلتے بلکہ دن دیہاڑے گھروں اور جہاں ڈاکوؤں کا دل چاہا لوٹ مار کی گئی۔

پولیس اعداد وشمار کے مطابق رواں سال کے پہلے ایک ماہ کے دوران چھ ہزار سے زائد مقدمات درج ہوئے جبکہ گزشتہ سال اسی عرصہ کے دوران اڑتالیس سو سے زائد مقدمات درج ہوئے تھے۔ چوری اور ڈکیتی کی تین سو سے زائد وارداتوں میں جرائم پیشہ افراد نے شہریوں کو کروڑوں کی نقدی اور قیمتی سامان سے محروم کردیا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -