سوگ | اختر الایمان |

سوگ | اختر الایمان |
سوگ | اختر الایمان |

  

سوگ

مرنے دو مرنے والوں کو ،غم کا شوق فراواں کیوں ہو

کس نے اپنا حال سنا ہے، ہم ہی کس کا درد  نباہیں

یہ دنیا ، یہ دنیا والے اپنی اپنی فکروں میں ہیں

اپنا اپنا توشہ سب کا،اپنی اپنی سب کی راہیں

وہ بھی مردہ ، ہم بھی مردہ ، وہ آگے ہم پیچھے پیچھے

اپنے پاس دھرا ہی کیا ہے،ننگے آنسو،بھوکی آہیں

شاعر: اخترالایمان

(شعری مجموعہ:گرداب،سالِ اشاعت1943)  

Souq

 Marnay    Do    Marnay    Waalon     Ko   ,   Gham    Ka    Shouq    Faraawan    Kiun    Ho

Kiss    Nay    Apna     Haal    Syuna    Hay ,   Ham    Hi    Kiss   Ka    Dard   Nibaahen

Yeh    Dunya  ,   Yeh    Dunya    Waalay    Apni    Apni    Fikron    Men   Hen

Apna    Apna    Tosha    Sab    Ka  ,  Apni   Apni    Sab    Ki    Raahen

Wo     Bhi     Murda  ,  Ham    Bhi    Murda  ,   Wo    Aagay    Ham    Peechay    Peechay

Apnay     Paas    Dhara    Hi    Kaya    Hay ,   Nangay    Aaansu  ,   Bhooki    Raahen

Poet: Akhtar   ul   Eman

مزید :

شاعری -سنجیدہ شاعری -غمگین شاعری -