مری میں ہوٹل ملازمین کا مرد و خواتین سیاحوں پر تشدد ،ویڈ یو دیکھ کر آپ کا بھی دل خون کے آنسو روپڑے

مری میں ہوٹل ملازمین کا مرد و خواتین سیاحوں پر تشدد ،ویڈ یو دیکھ کر آپ کا بھی ...
مری میں ہوٹل ملازمین کا مرد و خواتین سیاحوں پر تشدد ،ویڈ یو دیکھ کر آپ کا بھی دل خون کے آنسو روپڑے
کیپشن:    سورس:   twitter

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )مری میں مقامی ریسٹورینٹ گلوریا جینز کے ملازمین نے پہلے مرد پر تشدد کیا جس سے بچانے کے لیے خواتین آگے بڑھیں تو ملازمین نے ان پر بھی تشدد کرنا شروع کر دیا اور مرد و خواتین سیاحوں کو زخمی کردیا۔ ریسکیو حکام نے سیاحوں کی جان بچائی۔متاثرہ خاندان کا کہنا تھا کہ وہ نماز کے لیے مقامی ریسٹورنٹ میں رکے تھے اور آرڈر نہیں دیا جس پر ریسٹورنٹ کے ملازمین نے بدتمیزی کرنا شروع کردی اور تلخ کلامی کے دوران ریسٹورنٹ کے ملازمین نے ہم پر تشدد کرنا شروع کر دیا۔خبر رساں ذرائع کے مطابق زخمی ہونے والی فیملی کا تعلق فیصل آباد سے ہے، نجی ریسٹورنٹ کے ملازمین کے تشدد سے زخمی ہونے والے علی توقیر اپنی فیملی کے ساتھ مری میں سیر و تفریح کے لیے آیا تھا، جسے زخمی حالت میں مقامی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

دوسری جانب راولپنڈی پولیس کا واقعے کا علم ہونے پر اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاونٹ سے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مری نجی ہوٹل پر سیاحوں اور ہوٹل انتظامیہ کے مابین تلخ کلامی اور لڑائی جھگڑے کے معاملے پر ہوٹل مینیجر سمیت 10 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے، واقعہ گلوریا جینز نامی انٹرنیشنل کافی چین کے ہوٹل ایکسپریس وے پر پیش آیا، سیاح علی توقیر کی درخواست پر مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں، ملزمان کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دلوائی جائے گی، کسی کو بھی تشدد، ہراساں کرنے یا دھمکانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی، میرٹ اور قانون کی بالا دستی کو یقینی بنایا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -