کنٹونمنٹ بورڈ الیکشن، ن لیگ، پی ٹی آئی برابر، لاہور، سیالکوٹ، پنڈی، واہ کینٹ میں مسلم لیگ ن نے میدان مار لیا، جہلم، گوجرنوالہ بہا ولپور، کھاریاں میں تحریک انصاف کامیاب

      کنٹونمنٹ بورڈ الیکشن، ن لیگ، پی ٹی آئی برابر، لاہور، سیالکوٹ، پنڈی، ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور، پشاور،کراچی، کوئٹہ، پنڈی،ملتان (بیورو رپورٹس،مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) ملک بھر میں کنٹونمنٹ بورڈز کے بلدیاتی ا نتخابات کے نتائج کا سلسلہ رات گئے تک جاری رہا رات گئے دنیا ٹی وی کے مطابق  کنٹونمنٹ بورڈز کے 219وارڈز میں 211کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج موصول ہو گئے نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف60وارڈز میں کامیابی حاصل کر کے پہلے مسلم لیگ ن59 حلقوں وں میں کامیابی حاصل کرکے دوسرے آزاد امیدوار55وارڈز میں کامیابی سمیٹ کر تیسرے پیپلز پارٹی 17حلقوں میں کامیابی حاصل کر کے چوتھے نمبر پر رہی  مٹحدہ قومی موومنٹ10وارڈز میں کامیاب ہوئی  جماعت اسلامی 5بلوچستانم عوامی پارٹی اور عوامی نیشنل پارٹی دو حلقوں میں کامیابی سمیٹ سکی  اسی طرح اگر صوبائی سطح پر دیکھا جائے تو  پنجاب میں 51نشستوں کے ساتھ مسلم لیگ ن پہلے آزاد امیدوار32نشستوں کے ساتھ دوسسرے اور تحریک انصاف28نشستوں کے ساتھ تیسے نمبر پر رہی  مسلم لیگ ق دو نشستیں حاصل کر سکی کے پی کے میں تحریک انصاف  پنجاب میں مسلم لیگ ن اور بلاچستان میں آزاد امیدواروں نے کامیابی سمیٹی جبکہ سندھ میں پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی میں کانٹے کا مقابلہ رہا  خیبر پختونوا میں تحریک انصاف18نشستوں کے ساتھ پہلے آزاد امیدوار9نشستوں کے ساتھ دوسرے مسلم لیگ ن 5نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہی  پی پی نے تین نشستی حاصل کیں اے این پی نے دو نشستین حاصل کیں پنجاب میں مسلم لیگ ن کا پلڑا بھاری رہا اور اپوزیشن جماعت مسلم لیگ ن 44 نشستوں کے ساتھ سب سے آگے ہے۔آزاد امیدوار 31 نشستوں کے ساتھ دوسرے اور تحریک انصاف 27 نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے۔لاہور اور راولپنڈی میں تحریک انصاف کو بری طرح شکست کا سامنا کرنا پڑا۔لاہور میں والٹن اور لاہور کینٹ مسلم لیگ ن نے جیت لیے جبکہ چکلالہ کینٹ میں بھی پی ٹی آئی کو اپ سیٹ شکست ہوئی۔واہ کینٹ میں مسلم لیگ ن نے 10 میں سے 8 نشستیں جیت کر تحریک انصاف کو بڑا دھچکا پہنچایا۔وہیں گوجرانوالا میں تحریک انصاف نے 10 میں سے 6 نشستیں جیت کر مسلم لیگ ن کو مات دی، اس کے علاوہ بہاولپور، جہلم اور کھاریاں میں تحریک انصاف نے میدان مار لیا۔ملتان کینٹ کی 10 میں سے 9 نشستیں آزاد امیدوار لے اْڑے۔ مسلم لیگ (ن)  اپنے لاہور کے قلعے کو بچانے میں کامیاب ہو گئی،تحریک انصاف بھرپور انتخابی مہم کے باوجود اپنے سیاسی حریف کے قلعے میں دڑاڑ نہ ڈال سکی،غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق مسلم لیگ (ن) نے لاہورکے دونوں کنٹونمنٹ بورڈز کے19وارڈزمیں سے 15میں کامیابی حاصل کر لی، والٹن کنٹونمنٹ بورڈ میں مسلم لیگ (ن) نے9وارڈزمیں کلین سویپ جبکہ لاہورکنٹونمنٹ بورڈ میں 6وارڈز میں کامیابی حاصل کی، یہاں تین وارڈز میں پی ٹی آئی جبکہ ایک پر آزادامیدووار کامیاب ہوا۔والٹن کنٹونمنٹ بورڈ کے وارڈ نمبر ایک کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتیجے کے مطابق مسلم لیگ (ن) کے چوہدری اشفاق احمد 4096ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے محمد وحید ستار 2789ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے،غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق وارڈ نمبر دو میں مسلم لیگ (ن) کے امیدوار محمد حنیف 4331ووٹ لے کر پہلے نمبر جبکہ پیپلزپارٹی کے محمد طارق صدیقی 3954ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے یہاں تحریک انصاف کے امیدوارمحمد صیام نے 3696ووٹ حاصل کئے اور تیسرے نمبر پر رہے۔ غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق وارڈ نمبر 3میں مسلم لیگ (ن) کے امیدوار چوہدری محمد شریف 5470ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے فیصل سعود بھٹی 4753ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق وارڈ نمبر 4 میں مسلم لیگ (ن) کے فقیر حسین 1877ووٹ لے کر پہلے جبکہ تحریک انصاف کے محمد اسلم بٹ 1850ووٹ لے کر دوسر ے نمبر پر رہے۔ غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق وارڈ نمبر 5میں (ن) لیگ کے راجہ نور سبحانی 1850ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے جبکہ تحریک انصاف کے جاوید ضمیر احمد1838ووٹ لے کردوسرے نمبر پر رہے۔ غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج کے مطابق وارڈ نمبر 6میں مسلم لیگ (ن) کے امیدوار نعمان نعیم نے4373ووٹ لے کر میدان مار لیا جبکہ اس وارڈمیں تحریک انصاف کے امیدوار بشارت علی 2604ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہیبلوچستان میں کنٹونمنٹ بورڈ کے بلدیاتی انتخابات کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق چار آزاد امیدوار کامیاب ہوئے، پی ٹی آئی تین جبکہ بلوچستان عوامی پارٹی دو وارڈز میں کامیاب ہوئی،پیپلز پارٹی، جمعیت علماء اسلام سمیت دیگر سیاسی جماعتیں کسی بھی حلقے میں کامیاب نہیں ہوسکیں، بلوچستان کے تین اضلاع کوئٹہ، ژوب اور لورالائی کے کنٹونمنٹ بورڈز کے انتخابی نتائج  رات گئے تک موصول ہونے والے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق کوئٹہ کنٹونمنٹ کی وارڈ نمبر 1سے آزاد امیدوار سیف اللہ خان 714ووٹ لیکر کامیاب جبکہ پی ٹی آئی کے دوست محمد 550ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے،کوئٹہ کی وارڈ نمبر 2 پاکستان تحریک انصاف کے  بشیر احمد 513 ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے، وارڈ نمبر 3پاکستان تحریک انصاف کے منظور علی 542 ووٹ لیکر کامیاب جبکہ آزادامیدوار اسلم کرد274ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے، وارڈ نمبر 4سے آزاد امیدوار محمد مختار قریشی 856ووٹ لیکر کامیاب،پی ٹی آئی کے عبدالسلام 598دوسرے نمبر پر رہے،وارڈ نمبر5سے پی ٹی آئی کے شفیق بھٹی 460جبکہ محمدعامر 352ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے، حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق ژوب میں وارڈ نمبر ایک سے بلوچستان عوامی پارٹی کے امیدوار اختر گل کاکڑ 115ووٹ لیکر کامیاب جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کی امیدوار شیرین بی بی 44ووٹ لیکر دوسر ے نمبر پر رہیں،ژوب کنٹونمنٹ بورڈ کی وارڈ نمبر 2 سے بلوچستان عوامی پارٹی کے امیدوار جمعہ خان  59 ووٹ لیکر کامیاب ہوگئے جبکہ عمران مندوخیل 37 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے۔ لورالائی کے وارڈ نمبر 1کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق بلوچستان عوامی پارٹی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار عبدالوحید خان جلال زئی 224ووٹر لیکر کامیاب ہوگئے جبکہ لورالائی انصاف پینل کے حمایت یافتہ امیدوار ظریف خان203 ووٹر لیکر دوسرے نمبر پر رہے جبکہ وارڈ نمبر 2 سے پہلے ہی نعیم فیصل بلا مقابلہ منتخب ہو چکے ہیں انہیں بھی بلوچستان عوامی پارٹی کی حمایت حاصل تھی۔بلوچستان سے بلدیاتی انتخابات میں بلوچستان عوامی پارٹی کے حمایت یافتہ دو آزاد امیدواروں سمیت چار آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں جبکہ پی ٹی آئی تین اور بلوچستان عوامی پارٹی دو حلقوں میں کامیابی حاصل کرسکی ہے۔ پشاور ملتا ن، پنڈی اور لاہور سیالکوٹ، واہ کینٹ ایبٹ آباد میں میں ٹحریک انصاف کو بری طرح شکست ہوئی، مسلم لیگ ن کو گوجرانوالہ میں غیر متوقع طور پر شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ سیالکوٹ میں  مسلم لیگ ن نے میدان مار لیا  پشاور میں پیپلز پارٹی نیمرتری حاصل کی ملتان سے پی ٹی آئی کنٹونمنٹ بورڈ الیکشن میں ایک بھی سیٹ نہ جیت سکی، ن لیگ کا ایک امیدوار کامیاب ہوگیا، ملتان کینٹ کے 10 وارڈز میں سے 9 پر ازاد امیدوار کامیاب ہوگئے جبکہ ممبر کی ایک سیٹ پر ن لیگ کی ٹکٹ پر الیکشن لڑنے والے امیدوار کامیاب ہوگئے۔ وارڈ نمبر 1 سے آزاد امیدوار رانا اشرف 719 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ آزاد امیدوار جاوید انجم 608 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ وارڈ نمبر 2 سے آزاد امیدواروں غلام جیلانی 158 ووٹ لے کر جیت گئے جبکہ پی ٹی آئی کے امیدوار رانا خلیل 131 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ وارڈ نمبر 3 سے ن لیگ کے اختر رسول فریدی نے 321 ووٹ لے کر میدان مارلیا جبکہ آزاد امیدوار خالد اسد 249 ووٹ حاصل کر سکے۔ وارڈ نمبر 4 سے آزاد امیدوار شیخ وحید قریشی 929 ووٹ لے کر جیت گئے جبکہ پی ٹی آئی کے سعید احمد مونی316 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ وارڈ نمبر 5 سے آزاد امیدوار بلال خانی نے 1229 ووٹ لے کر میدان مار لیا۔ جبکہ آزاد امیدوار ہمایوں اکبر 1115 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ وارڈ نمبر 6 سے آزاد امیدوار ثناء اکبر 467ووٹ  لے کر جیت گئے جبکہ آزاد امیدوار عارف رضا 280 ووٹ حاصل کر سکے۔وارڈ نمبر 7 سے آزاد امیدوار شمشاد علی انصاری نے 396 لے کر کامیابی سمیٹ لی جبکہ ان کے مد مقابل آزاد امیدوار شیخ محمد یسین صرف  68 ووٹ حاصل کرسکے۔ اسی طرح وارڈ نمبر 8 سے یعقوب ناصر آزاد حیثیت سے 64 ووٹ  لیکر کامیاب ہوئے جبکہ ان کے مخالف امیدوار امجد مجید صرف 60 حاصل کر سکے۔وارڈ نمبر 9 سے میجر ریٹائرڈ صادق زعیم  آزاد سیٹ پر 121 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے جبکہ ق لیگ کی امیدوار طائرہ نسیم 46 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہیں۔ اسی طرح وارڈ نمبر 10 سے آزاد امیدوار اور سابق ممبر  کنٹونمنٹ بورڈ خورشید خان 163 لیکر کر جیت گئے جبکہ ان کے مخالف امیدوار سرفراز رمضان صرف 53 ووٹ حاصل کر سکے۔کنٹونمنٹ بورڈ اوکاڑہ کے پانچ واڈوں میں سے چار وارڈں میں آزاد امیدوار غیرجیت  چکے ہیں جبکہ ایک وارڈ میں پی ٹی آئی کے نامزد امیدوار نے فتح حاصل کی ہیں وارڈ نمبر1 میں  پی ٹی آئی  کے نامزد امیدوار شہزاد شفیع جبکہ واڈوں میں وراڈ نمبر 2 چوہدری عمیر خادم وارڈ نمبر 5  میں آزاد امیدوار اقبال حسین شاہ وراڈ نمبر 3میں آزاد امیدوار  ندیم انور بھٹی وارڈ نمبر 4 میں راجہ مبشر حسین کامیاب ہوچکے ہیں۔کنٹونمنٹ بورڈ جہلم کے انتخابات میں دونوں وارڈز میں پی ٹی آئی کے امیدواروں نے بازی جیت لی۔ٹرن آوٹ 35فیصد  رہاگوجرانوالہ کنٹونمنٹ بورڈ کے 10 وارڈوں کے مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق10 میں سے 6 وارڈوں پر پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں نے میدان مار لیا۔کنٹونمنٹ بورڈ کی 2 سیٹوں پر 2 آزاد امیدوار بھی کامیاب ہو گئے۔پاکستان مسلم لیگ ن صرف 2 سیٹوں پر کامیابی حاصل کر سکی وارڈ نمبر 1 سے تحریک انصاف کے قمر علی چیمہ وارڈ نمبر 2 سے تحریک انصاف کے ناصر حسین  وارڈ نمبر 3 سے آزاد امیدوار عرفان چاند بٹ وارڈ نمبر 4 سے تحریک انصاف کے غلام محی الدین وارڈ نمبر 5 سے آزاد امیدوار کاشف حفیظ وارڈ نمبر 6 سے تحریک انصاف کے ساجد اکرام وارڈ نمبر 7 سے تحریک انصاف کے نثار احمد بیگ وارڈ نمبر 8 سے مسلم لیگ ن کے کامران ملک وارڈ نمبر 9 سے مسلم لیگ ن کے عبدالمجیدجبکہ وارڈ نمبر 10 سے تحریک انصاف کے غلام مجتبی جیے گئے۔جیتنے والوں کے دفاتر میں ًڈھول کی تھاپ پربھنگڑے اور مٹھائیوں تقسیم جاری۔شورکوٹ چھاؤنی میں کنٹونمنٹ بورڈ کے دو وارڈز میں انتخاب کے دوران غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق دونوں آزاد امیدواروں نے کامیانی حاصل کر لی۔ وارڈ نمبر 1 میں بارہ امیدوار مد مقابل تھے جن میں سے آزاد امیدوار منیر احمد سندھیلہ نے 1414 ووٹ لے کر کامیابی حاصل کی اور ان کے مدمقابل مسلم لیگ ن کے امیدوار محمد سلیم 624 ووٹ حاصل کر کے دوسرے نمبر پر رہے جبکہ وارڈ نمبر 2 میں چھ امیدواروں میں سے بھی کامیابی آزاد امیدوار زاہد مصطفی کے حصے میں آئی اور انہوں نے 1927 ووٹ حاصل کئے جبکہ مسلم لیگ ن کے امیدوار عبدالغفار نے 356- ووٹ لے کر دوسری پوزیشن حاصل کی 
کنٹونمنٹ نتائج


لاہور،راولپنڈی،کراچی،کوئٹہ،ملتان،گوجرانوالہ
پشاور،(نمائندہ خصوصی، کرائم رپورٹر بیورورپورٹس، ایجنسیاں) ملک بھر کے 42 کنٹونمنٹ بورڈز میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کیلئے ووٹنگ کا مرحلہ مکمل ہو گیا،مختلف مقامات پر بارش کی وجہ سے صبح کے وقت ووٹ ڈالنے کی شرح انتہائی کم رہی تاہم دوپہر کے وقت عوام کی بڑی تعدادنے اپناحق رائے دہی استعمال کرنے کیلئے پولنگ اسٹیشنوں کا رخ کیا جس کی وجہ سے غیر معمولی رش دیکھنے میں آیا،مختلف مقامات پر سیاسی جماعتوں کے کارکنوں میں لڑائی جھگڑے اور تکرار کے واقعات بھی پیش آئے تاہم مجموعی طو رپر حالات پر امن رہے، کچھ مقامات پر مخالفین کی جانب سے مبینہ دھاندلی کے الزامات بھی عائد کئے گئے،پیپلزپارٹی نے کراچی کنٹونمنٹ بورڈزمیں قواعد کی خلاف ورزی پر الیکشن کمیشن کو خط لکھ دیا،سیاسی جماعتوں کے مرکزی اور صوبائی رہنما پولنگ کیمپوں کا دورہ رکر کے کارکنان اور ووٹرز کا حوصلہ بڑھاتے رہے، پولنگ کا وقت ختم ہونے کے بعد غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آنے پر کامیاب ہونے والے امیدوار وں کے حامیوں نے بھرپور جشن منایا،کامیاب امیدواروں کے حامی ڈھول کی تھاپ پر بھنگڑے ڈالتے رہے اور مٹھائیاں تقسیم کی جاتی رہیں،پولیس سمیت دیگر قانون نافذ کرنے والے اہلکاروں کی جانب سے سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے۔صوبائی دارالحکومت میں مختلف مقامات پر مسلم لیگ (ن) اور تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان لڑائی جھگڑے کے واقعات ہوئے، کارکنوں کے درمیان ہونے والی تلخ کلامی لڑائی جھگڑے میں بدل گئی اور کارکنوں نے ایک دوسرے پر تھپڑوں کی بارش کردی تاہم پولیس نے موقع پر پہنچ کر دونوں طرف کے لوگوں کو پیچھے ہٹادیا۔ملتان میں کنٹونمنٹ بورڈز کے بلدیاتی انتخابات کے دوران مبینہ طور پر قواعد وضوابط کی خلاف ورزیوں پر لڑائی جھگڑے اور دنگا فساد کے واقعات پیش آئے جس کی وجہ سے پولنگ کا عمل بھی متاثر ہوا۔ملتان میں مبینہ طو رپر پی ٹی آئی کی خواتین کارکنوں کی جانب سے پولنگ اسٹیشن کے اندر جانے کی کوشش پر لڑائی ہو گئی۔ دونوں جانب سے کارکنان نے لاتوں اور گھونسوں کا آزادانہ استعمال کیا۔ مرد ایک دوسرے سے گتھم گتھا ہوگئے اور اس دوران خواتین بھی لڑائی میں کود پڑیں،لڑائی جھگڑے کی وجہ سے پولنگ کا عمل بھی متاثر ہوا تاہم پولیس نے کارروائی کر کے ہنگامہ آرائی کرنے والوں کو باہر نکال کر پولنگ کا عمل دوبارہ شروع کر وادیا۔راولپنڈی کے چکلالہ کینٹ وارڈ نمبر 7کے خواتین پولنگ اسٹیشن پر مسلم لیگ (ن) اور پی ٹی آئی کی خواتین کارکنوں میں تصادم ہو گیا جس سے الیکشن کا عمل متاثر ہوا تاہم پولیس نے موقع پر پہنچ کر حالات کوقابو میں کرلیا۔۔ضلع راولپنڈی میں چکلالہ کنٹونمنٹ ورڈ 8 کے پولنگ اسٹیشن 6 پر سیاسی کارکنوں میں تصادم ہوا،تصادم تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کے کارکنوں کے درمیان ہوا،ایس ایچ او سول لائن پولیس نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچے اور صورتحال کو کنٹرول کیا۔ضلع اوکاڑہ میں انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر پی ٹی آئی کے رہنما کو 4 گارڈز سمیت حراست میں لے لیا گیا۔پو۔کوئٹہ میں کنٹونمنٹ بورڈ حلقہ نمبر 5 بوائے اسکاؤٹ میں 9 ووٹوں کو چیلنج کر دیا گیا۔۔الیکشن کمیشن کے مطابق اپنے وارڈ سے کامیاب ہونے والا امیدوار ممبر کنٹونمنٹ بورڈ کا ممبر بنے گا، نو منتخب کنٹونمنٹ بورڈ کے ممبران نائب صدر کا انتخاب کریں گے،کنٹونمنٹ بورڈ کا سربراہ اسٹیشن کمانڈر ہوتا ہے، نائب صدر اور ممبرز اسی کے ماتحت کام کرتے ہیں۔
ووٹنگ

مزید :

صفحہ اول -