قبائل تحفظ موومنٹ کے تشکیل کردہ 50 رکنی سپریم کونسل کا اجلاس 

قبائل تحفظ موومنٹ کے تشکیل کردہ 50 رکنی سپریم کونسل کا اجلاس 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


خیبر (بیورورپورٹ) قبائل تحفظ موومنٹ کے تشکیل کردہ 50 رکنی سپریم کونسل کا پہلا اجلاس درہ آدم خیل ملک بازگل حجرے میں منعقد ہوا اجلاس میں فاٹا گرینڈ الائنس اور درہ آدم خیل قومی موومنٹ کے علاوہ کثیر تعداد میں مشران وکشران نے شرکت کی اس موقع پر قبائل تحفظ موومنٹ کے صدر ابوسفیان محسود. سردار آصغر آفریدی. ملک بازگل آفریدی.ملک نورزمان ملک صلاح الدین ملک صادق ملک اویس خان اور دیگر نے کہا کہ 50 رکنی سپریم کونسل قبائل کا واحد جرگہ ہے جو اعلیٰ سطح پر اعلیٰ حکام کے ساتھ انضمام خلاف ملاقاتیں کرینگے انہوں نے کہا کہ جس نے قوم کاسودہ کیا ہے قوم انکو کھبی معاف نہیں کرینگے قبائلی عوام پہلے سے دربدر کے ٹھوکریں کھا رہے تھے اوپر سے جبری انضمام کرکے مزید مشکلات میں اضافہ کیا تمام اداروں کو بتانا چاہتے ہیں کہ سپریم کونسل قبائلی عوام کا واحد جرگہ ہے اس لئے حکومت کو چاہیے کہ سپریم کونسل کے ساتھ بیٹھ کر مسائل اور انضمام پر بات کریں انہوں نے کہا کہ پہلے قبائلی علاقوں سے لاپتہ افراد کو بازیاب کرے اور دہشت گردی میں تباہ شدہ گھروں کو دوبارہ آباد کرنے کے لئے فی گھر پچاس لاکھ روپے دئیے جائیں اور 70سالوں سے جو قربانیاں دی ہے انکا صلہ دیا جائے انہوں نے کہا کہ جو سپریم کونسل تشکیل دی ہے ان سے کمیٹیاں تشکیل دیں گے ہر کمیٹی کو مختلف زمہ داری سونپ دی جائے گی اس سے پہلے سپریم کونسل کا نوٹیفکیشن صدر مملکت کو بھیج دی ہے مشران کمیٹی اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کرینگے اورانضمام خلاف اور قبائلی عوام کو انضمام سے پیدا ہونے والے مشکلات سامنے رکھیں گے  انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام کا مرجر نہیں مرڈر کیا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو جن لوگوں نے دونوں ہاتھوں سے لوٹا ہے انکے کے کہنے پر مرجر کیا جبکہ قربانیوں دینے والوں کو سائیڈ لائن کر دیا ہے اور آج انہی لوگوں کی وجہ قبائلی عوام شدید مشکلات سے دوچار ہیں قبائل تحفظ موومنٹ کا ایک پوائنٹ ایجنڈا ہے وہ علیحدہ صوبے کاہے انہوں نے کہا کہ تمام انضمام مخالف تحریکوں کو ایک پیچ لائیں گے اور جبری انضمام سے چھٹکارا پائیں گے آخر انہوں نے کہا کہ سپریم کونسل اسلام آباد میں پریس کانفرنس اور اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کرنے کے لئے طریقہ کار وضع کیا جائے گا۔